اچھی نیند سے دل کے دورے کا خطرہ کم

Image caption ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ اچھی نیند صحت کے لیے ضروری ہے اور اس پر لوگوں کی حوصلہ افزائی کی جانی چاہیے

ایک تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ سات گھنٹے یا اس سے زیادہ کی نیند دل کی صحت اور صحت مند زندگی گزارنے میں مدد گار ثابت ہوتی ہے۔

وسیع پیمانے پر کیے گئے ایک مطالعہ کے مطابق، ورزش، خوراک، شراب نوشی اور تمباکو نوشی کے متعلق روایتی مشوروں کے نتیجے میں دل کے امراض یا فالج سے اموات میں کمی ہوئی ہیں، لیکن اس سے بھی زیادہ زندگیاں اچھی نیند لینے سے بچی ہیں۔

’پریونٹنگ کارڈیولوجی‘ نامی یورپی جریدے میں شائع ہونے والی اس تحقیق میں یورپی محققین کے مطابق ضروری نیند کے حصول کے مشورے سے صحت عامہ پر مثبت اثرات پڑ سکتے ہیں۔

نیدرلینڈ کی ایک ٹیم گزشتہ دس سال سے زیادہ عرصے سے 14000 مرد اور خواتین میں دل کے امراض اور فالج کا جائزہ لے رہی ہے۔

اس مطالعے کے اختتام پر پتہ چلا کہ جائزے میں شامل افراد میں سے تقریباً 600 افراد کو دل کا دورہ پڑا یا پھر وہ فالج کی زد میں آئے جن میں سے 129 کی موت واقع ہو گئی۔

تحقیق سے یہ بھی پتہ چلا کہ وہ لوگ ان امراض کا کم شکار ہوئے جن کے معمولات میں ورزش، اچھی خوراک، معتدل شراب نوشی کے ساتھ تمباکو نوشی سے پرہیز شامل تھا۔

صحت کے تمام اشاریوں کو سامنے رکھنے پر یہ پتا چلا کہ ان پر عمل کرنے سے دل کے امراض میں 57 فی صد تک کمی ہوتی ہے جبکہ دل کے دورہ سے مرنے میں 67 فی صد کی کمی دیکھی گئی ہے۔

لیکن جب ان محرکات کے ساتھ اچھی نیند کو بھی شامل کر لیا گيا تو ان میں بالترتیب 65 فیصد اور 83 فیصد کمی دیکھی گئی۔

تحقیق پر تبصرہ کرتے ہوئے ناروے کی یونیورسٹی برجن کی پروفیسر گریتھ ایس ٹیل نے کہا کہ ’اچھی نیند کے بارے میں عوامی صحت کے ماہرین اور والدین دونوں کو بیدار رہنا چاہیے۔‘

انھوں نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا: ’اس تحقیق کا اہم پیغام ہے کہ ہم نیند کو صحت کے اہم پہلو میں شمار کریں۔ عوام کی صحت کے نقطہ نظر سے ہمیں اچھی نیند کے بارے میں لوگوں کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے اور صحت کے دوسرے محرکات کی طرح گھروں میں اس کی تعلیم بھی ہونی چاہیے۔‘

اسی بارے میں