برطانیہ میں پلے سٹیشن 4 کی ’بےمثال طلب‘

Image caption پلے سٹیشن فور برطانیہ میں لانچ ہونے سے دو ہفتے پہلے امریکہ میں لانچ ہوا تھا

برطانیہ میں سونی کے گیمنگ کنسول ’پلے سٹیشن 4‘ کی عام فروخت کے آغاز کے دوسرے ہی دن کئی دکانوں پر اس کا سٹاک ختم ہونے کی اطلاعات ہیں۔

یہ کنسول جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب فروخت کے لیے پیش کیا گیا تھا اور سرد موسم کے باوجود خریداروں کی بڑی تعداد دکانوں کے باہر جمع تھی۔

اس مرتبہ پلے سٹیشن 4 کی فروخت کا آغاز پہلے آئیں پہلے پائیں کی بنیاد پر کیا گیا کیونکہ یہ ان چند طریقوں میں سے ایک ہے جس کے تحت لوگ کرسمس سے پہلے یہ کنسول حاصل کر سکیں گے۔

آن لائن خریداری کی ویب سائٹ ایمیزون کا کہنا ہے کہ ان صارفین کو کرسمس سے پہلے گیمنگ کنسول نہیں مل سکے گا جنھوں نے 13 نومبر سے پہلے خریداری کے لیے آرڈر نہیں کیا۔

پلے سٹیشن فور کی برطانیہ میں فروخت امریکہ کے دو ہفتے بعد اور دنیا بھر میں مائیکرو سافٹ کے ایکس باکس ون کی فروخت کے آغاز کے ایک ہفتے بعد شروع ہوئی ہے۔

فروخت کے لیے پیش کیے جانے کے 24 گھنٹوں کے اندر اندر ہی ایکس باکس ون اور پلے سٹیشن 4 کے دس دس لاکھ کنسولز فروخت ہوئے۔

سونی کے ایک ترجمان نے بی بی سی کو جاری ایک بیان میں بتایا کہ’بہت تیزی سے ہمارا سٹاک ختم ہو رہا ہے لیکن ہم ترسیل اور پرچون فروخت میں اپنے شراکت داروں کے ساتھ فروخت کو بڑھانے کے لیے کام کریں گے۔‘

کمپنی نے کہا کہ انھیں کنسول کی ’بےمثال‘ مانگ موصول ہوئی ہے۔

بی بی سی کے ٹیکنالوجی کے نامہ نگار روری سیلان جونز کا کہنا ہے کہ پلے سٹیشن فور کے اس وقت لانچ کو کرسمس کے موقع پر مارکیٹ میں برتری حاصل کرنے کی کوشش کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

لندن میں کوونٹ گارڈن میں قطار میں سب سے پہلے عمران چوہدری کھڑے تھے۔ انھوں نے کہا کہ ’میرا ہمیشہ سے یہ مقصد تھا کہ میں ملک میں پلے سٹیشن فور کے پہلے خریداروں میں شامل ہونے کی کوشش کروں۔‘

جن صارفین نے ایمیزون کو چھ اگست سے پہلے پلے سٹیشن فور کی خریداری کا آرڈر دیا تھا انھیں لانچ کے موقع پر اپنا کنسول لینے کی آپشن دی گئی تھی۔

کنسول کو گیموں کی ویب سائٹ پر فروخت کیا گیا اور صرف ان صارفین کو کرسمس سے پہلے کنسول موصول ہونے کی یقین دہانی کرائی کی گئی جنھوں نے آرڈر دینے کے ساتھ کنسول کی قیمت جمع کروائی تھی۔

اسی بارے میں