پاکستانی اور بھارتی ویب سائٹس کی ہیکنگ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption پاکستانی ہیکرز اس سے قبل بھی بھارتی ویب سائٹس اور بھارتی ہیکرز پاکستانی ویب سائٹس ہیک کرتے رہے ہیں

بھارتی اخبار دی ہندو میں شائع شدہ ایک خبر میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ بھارتی ہیکروں نے بھارت کے یومِ جمہوریہ پر پاکستانی ہیکروں کی جانب سے دو ہزار سے زیادہ بھارتی ویب سائٹس کی ہیکنگ کے جواب میں ہزاروں پاکستانی ویب سائٹس کو ہیک کیا ہے۔

تاہم پاکستان میں انٹرنیٹ پر نظر رکھنے والے ایک ماہر کا کہنا ہے کہ بظاہر پاکستانی ویب سائٹس کے ہیک ہونے کی اطلاعات نہیں ہیں۔

دی ہندو کے مطابق پاکستان سے تعلق رکھنے والے ہیکرز نے 26 جنوری کو بھارت کے یومِ جمہوریہ کے موقع پر 2018 بھارتی ویب سائٹوں کو نشانہ بنایا جن میں اداکارہ پونم پانڈے اور بھارت کے مرکزی بینک سینٹرل بینک آف انڈیا کی ویب سائٹیں بھی شامل تھیں۔

خیال رہے کہ سینٹرل بینک آف انڈیا کی ویب سائٹ کو کچھ عرصہ قبل بھی پاکستانی ہیکرز نے ہیک کیا تھا۔

اخبار نے بدھ کو شائع ہونے والی خبر میں بھارتی ہیکروں کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے جواباً منگل کو 2000 سے زیادہ پاکستانی ویب سائٹس کو ہیک کیا ہے۔

انٹرنیٹ پر دستیاب سکرین شاٹس اور بھارت کی گلوبل سائبر سکیورٹی رسپانس ٹیم کے بیان سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ ماڈل اور اداکارہ پونم پانڈے کی ویب سائٹ کو پاکستانی ہیکروں نے ہیک کر کے اس پر ’پاکستان زندہ باد‘ اور اس کے ساتھ ہی اسے ہیک کرنے کی والوں کی جانب سے ویب سائٹ ہیک کیے جانے کا پیغام لکھا تھا۔

اخبار دی ہندو کے مطابق اس واقعے کا بدلہ لینے کے لیے بھارتی ہیکروں کے دعوے کے مطابق پاکستانی ویب سائٹس کو ہیک کیا گیا ہے تاہم اس دعوے کی تصدیق یا اس کا کوئی ثبوت نہیں ملا اور بھارتی گلوبل سائبر سکیورٹی ٹیم نے اس حوالے سے تصدیق کرنے سے معذوری ظاہر کی۔

’دی ہندو‘ میں شائع شدہ خبر کے ساتھ دیے گئے سکرین شاٹ سے یہ ثابت نہیں ہوتا کہ کس پاکستانی ویب سائٹ کو ہیک کیا گیا ہے اور اس کے علاوہ کوئی ثبوت نہیں دیا گیا ہے۔

بھارتی ہیکرز کے گروہ ’انڈین سائبر رکھشک‘ نے انٹرنیٹ پر دعویٰ کیا ہے کہ وہ مزید پاکستانی ویب سائٹس کو نشانہ بنائیں گے۔

بھارت کی گلوبل سائبر سکیورٹی رسپانس ٹیم کی ایک اہلکار نے نام نہ بتانے کی شرط پر بی بی سی کو بتایا کہ’2018 ویب سائٹس کو پاکستانی ہیکرز نے ہیک کیا جبکہ اس کے جواب میں بھارتی ہیکرز نے 2000 سے زیادہ پاکستانی ویب سائٹس کو ہیک کیا۔‘

جب ان سے پوچھا گیا کہ کون سی پاکستانی ویب سائٹس ہیک کی گئیں تو انہوں نے بوجوہ اس کا جواب دینے سے معذوری ظاہر کی۔

پاکستانی ویب سائٹ ’پرو پاکستانی‘ کے عامر عطا نے کہا کہ ’میری اطلاعات کے مطابق پاکستانی ویب سائٹس ہیک نہیں کی گئی ہیں مگر میں وثوق سے ایسی بات نہیں کر سکتا کیونکہ اگر ایسی بات ہوتی تو پاکستانی بلاگز پر اس کا ذکر ہوتا یا اس بارے میں سوشل میڈیا پر بات ہوتی مگر ایسا کچھ نہیں ہے۔‘

اسی بارے میں