سونی نے ڈیٹا ذخیرہ کرنے کا ریکارڈ توڑ دیا

تصویر کے کاپی رائٹ sony
Image caption یہ سٹوریج ٹیپ 148 گیگا بائٹس فی مربع انچ کے حساب سے ڈیٹا سٹور کر سکے گی جو سنہ 2010 میں بنائے جانے والے ریکارڈ سے پانچ گنا زیادہ ہو گا

معروف الیکٹرونکس کمپنی سونی نے ایک نئی سٹوریج ٹیپ متعارف کروائی ہے جس میں 185 ٹیرا بائٹس ڈیٹا فی کارٹریج محفوظ کیا جا سکے گا۔

آئی بی ایم کی مدد سے بنائی جانے والی یہ ٹیپ 3,700 بلیو رے ڈسکس کے برابر ڈیٹا ذخیرہ کر سکے گی۔

یہ سٹوریج ٹیپ 148 گیگا بائٹس فی مربع انچ کے حساب سے ڈیٹا سٹور کر سکے گی جو سنہ 2010 میں بنائے جانے والے ریکارڈ سے پانچ گنا زیادہ ہو گا۔

سونی کمپنی کی متعارف کروائی جانے والی یہ سٹوریج ٹیپ ایسے کاروباری اداروں کے لیے فائدہ مند ہوں گی جو زیادہ عرصے کے لیے اپنا ڈیٹا محفوظ رکھنا چاہتی ہیں۔

تجزیہ نگاروں نے پیشنگوئی کی ہے کہ سنہ 2020 تک پوری دنیا کا ڈیٹا 40 ٹریلین گیگا بائٹس پر مشتمل ہو گا۔

سونی کمپنی کا کہنا ہے کہ اس ٹیپ کا استعمال ہارڈ ڈرائیوز کے مقابلے میں ڈیٹا ذخیرہ کرنے کا ایک سستا اور توانائی کا موثر طریقہ ہے تاہم اس ٹیپ سے دوبار ڈیٹا حاصل کرنا ایک سست عمل ہے۔

ایک بیان میں سونی کمپنی نے کہا ہے کہ قدرتی آفات آنے کے بعد ڈیٹا سسٹمز کی ریکوری جیسا کہ ڈیٹا بیسز اور ڈیٹا سرورز کے علاوہ انتظامیہ کی ضروری معلومات کو محفوظ بنانا بہت اہمیت اختیار کر چکا ہے اور پوری دنیا کی کمپنیاں نیا ڈیٹا سسٹمز بنانے کی جانب گامزن ہیں۔

بیان کے مطابق اس ٹیپ کے ذریعے بگ ڈیٹا استعمال کرنے کے لیے کلاؤڈ سروسز کی توسیع اور نئی منڈیوں کے قیام کے بارے میں ڈیٹا سٹوریج میڈیا کے لیے ایک بڑھتی ہوئی ضرورت ہے۔

اسی بارے میں