’اپیل 3.2 ارب ڈالر میں بیٹس الیکٹرونکس خریدنے پر غور کر رہی ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption اپیل کی جانب سے بیٹس کو خریدنے کے امکان پر کچھ ماہرین کو حیرت ہوئی ہے

امریکہ میں ذرائع ابلاغ میں آنے والی اطلاعات کے مطابق الیکٹرونکس کمپنی ایپل ہیڈ فون بنانے والی اور موسیقی کی سٹریمنگ سروس فراہم کرنے والے کمپنی بِیٹس الیکٹرونکس کو خریدنے کے لیے مذاکرات کر رہی ہے۔

رپورٹس میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ ایپل اس کمپنی کو خریدنے کے لیے 3.2 ارب ڈالر دینے پر غور کر رہی ہے۔ مکمل ہونے کی صورت میں یہ ایپل کی تاریخ کی مہنگی ترین خرید ہوگی۔

کہا جا رہا ہے کہ اس خرید سے ایپل کا مقصد فون اور میوزک انڈسٹری کے ساتھ ساتھ آن لائن موسیقی کی صنعت میں بھی قدم جمانا ہے۔

توقع کی جا رہی ہے کہ یہ دونوں صنعتیں مستقبل میں انتہائی مقبول اور منافع بخش رہیں گی۔

سب سے پہلے ان مذاکرات کی خبر دینے والے اخبار فائنینشل ٹائمز کا کہنا ہے کہ ان کے ذرائع کے مطابق دونوں کمپنیاں ابھی ممکنہ معاہدے کے سلسلے میں مذاکرات کر رہی ہیں۔

بیٹس کمپنی کے بانی میوزک پروڈیوسر جمی آئیوین اور ہپ ہاپ سٹار ڈاکٹر ڈرے ہیں اور اب تک اسے ہیڈ فونز بنانے کے سلسلے میں جانا جاتا تھا۔ اس سال کے آغاز میں کمپنی نے میوزک سٹریمنگ سروس شروع کی تھی۔

تاہم ایپل کی پہلے ہی آئی ٹیونز سٹور کی شکل میں سٹریمنگ سروس موجود ہے اور گذشتہ سال انھوں نے آئی ریڈیو متعارف کروایا تھا۔ اسی لیے اپیل کی جانب سے بیٹس کو خریدنے کے امکان پر کچھ ماہرین کو حیرت ہوئی ہے۔

فاریسٹر نامی تجزیاتی کمپنی کے جیمز مکوئیوی کہتے ہیں کہ بہت سے ایسے صارفین ہیں جو دونوں کمپنوں کے گاہک ہیں۔

وہ کہتے ہیں: ’یہ بہت حیران کن ہے۔ آج کی دنیا میں آپ ایسی کمپنی خریدتے ہیں جو یا تو آپ کو ایسی ٹیکنالوجی دے جو کسی اور کے پاس نہ ہو یا پھر اس کمپنی سے آپ کو ایسے صارفین ملیں جو کسی اور کے پاس نہ ہوں۔‘

ان کا کہنا ہے کہ ’یقیناً ان کے پاس کچھ نہ کچھ خفیہ ضرور ہوگا۔‘

قیمت کا یہ اندازہ بیٹس کمپنی کی عام مارکیٹ میں قیمت سے کہیں زیادہ ہے۔ گذشتہ ستمبر میں بیٹس کمپنی کی قیمت تقریباً ایک ارب ڈالر لگائی گئی تھی۔

اسی بارے میں