سیم سنگ پلازما ٹی وی بنانا بند کر رہی ہے

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ہم صارفین کو ان کی ضرورت کے مطابق مصنوعات مہیا کرنے کے لیے پرعزم ہیں: سام سنگ

جنوبی کوریا کی الیکٹرانکس کمپنی سام سنگ نےکہا ہے کہ مانگ میں کمی کی وجہ سے وہ اس سال کے نومبر تک پلازما ٹی وی بنانا بند کر دے گی۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ پلازما ٹی وی کی مانگ میں کمی کا مطلب یہ ہے کہ اسے خم دار اور الٹرا ہائی ڈیفینیشن (یو ایچ ڈی) ٹی وی بنانے پر توجہ مرکوز کرنی چاہیے۔

سام سنگ نے سی نیٹ ویب سائٹ کو بتایا کہ ’ہم صارفین کو ان کی ضرورت کے مطابق مصنوعات مہیا کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔‘

پینا سونک، سونی، ہٹاچی اور پائنیئر نے بھی حال ہی میں پلازما ٹی بنانا بند کر دیا تھا اور ٹیک ریڈار نامی ویب سائٹ کے مطابق توقع ہے کہ ایل جی بھی پلازما ٹی بنانا بند کر دے گی۔

پلازما ٹی وی کو چمکدار رنگ، اور بڑے فریم کی وجہ سے فلمیں اور کھیلوں کے مقابلے دیکھنے کے لیے انتہائی موزوں سمجھا جاتا ہے۔

لیکن پلازما ٹی وی ایل سی ڈی اور ایل ای ڈی کی نسبت زیادہ بجلی خرچ کرتی ہے اور اس کا وزن بھی زیادہ ہوتا ہے۔

ٹرسٹ ریویو ویب سائٹ کے مدیر ایوان کیپریوس نے کہا کہ ’یہ حیران کن نہیں ہے کہ سام سنگ نے پلازما ٹی بنانا چھوڑنے کا کہا ہے۔‘ ان کا کہنا تھا کہ’یو ایچ ڈی پلازما بنانا زیادہ پیچیدہ کام ہے لیکن یو ایچ ڈی بڑے ٹی وی سکرین کا مستقبل ہے۔‘

انھوں نے کہا کہ ’پلازما ٹی وی کی تصویر ایل ای ڈی اور ایل سی ڈی سے بہت بہتر ہے لیکن اس میں کچھ خامیاں بھی ہیں۔‘

ایوان کیپریوس نے کہا کہ ’مثال کے طور پر پلازما ٹی وی کو ایل ای ڈی کی طرح پتلا نہیں بنایا جا سکتا اور لوگ سٹائلش ٹی وی زیادہ پسند کرتے ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’چمک، رنگ اور بہتر تصویر والے ایل ای ڈی ٹی وی متعارف ہونے کے بعد پلازما سکرین بنانے کا جواز نہیں بنتا۔‘

اسی بارے میں