’اینٹی فیس بک‘ نیٹ ورک کی مقبولیت میں اضافہ

تصویر کے کاپی رائٹ ELLO
Image caption ’ایلو‘ کی ویب سائٹ بہت سادہ ہے مگر دیگر سوشل نیٹ ورکس کی مانند زیادہ ’یوزر فرینڈلی‘ یا استعمال میں آسان نہیں

نئے سوشل میڈیا نیٹ ورک ’ایلو‘ کے بانی نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ انھیں اس نیٹ ورک کا صارف بننے کے لیے فی گھنٹہ 31 ہزار درخواستیں موصول ہو رہی ہیں۔

امریکی ریاست ورمونٹ سے تعلق رکھنے والے پال بونٹز کے مطابق انھوں نے یہ گروپ اپنے 90 دوستوں کے درمیان رابطے کے لیے تشکیل دیا تھا۔

ان کا کہنا ہے کہ انھوں نے سات اگست کو اسے عام استعمال کے لیے دستیاب کرنے کا فیصلہ کیا اور وہ اس پر نہ تو کوئی اشتہار چلانے اور نہ ہی صارفین کا ڈیٹا فروخت کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

ان اقدامات کی وجہ سے اس نیٹ ورک کو ’اینٹی فیس بک‘ یا فیس بک مخالف نیٹ ورک قرار دیا جا رہا ہے۔

تاہم کچھ ماہرین کا کہنا ہے کہ ’ایلو‘ کی مقبولیت کو اپنی کچھ خدمات کے لیے صارف سے رقم کے تقاضے کی وجہ سے دھچکہ لگ سکتا ہے۔

’ایلو‘ کی ویب سائٹ بہت سادہ ہے اور دیگر سوشل نیٹ ورکس کی مانند زیادہ ’یوزر فرینڈلی‘ یا استعمال میں آسان نہیں۔

اس ویب سائٹ پر پہلے ہی ایک سائبر حملہ ہو چکا ہے جس کی وجہ سے یہ اختتام ہفتہ پر آف لائن رہی۔

پال بونٹز نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’ہم وقت کے ساتھ ساتھ سیکھ رہے ہیں اور ہمارے پاس بہت ماہر عملہ اور بیک اپ ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ابھی ان کے نیٹ ورک کا یہ ’بیٹا ورژن ہے، اس میں بگ ہیں اور یہ عجیب حرکتیں کرتا ہے لیکن یہ سب جتنا جلدی ممکن ہو سکا درست کیا جا رہا ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Ello
Image caption ’ایلو‘ کی آمدن کا ذریعہ اس کی خدمات کے عوض حاصل ہونے والی رقم ہوگی

بونٹز کے مطابق ان کے نیٹ ورک کو ’اینٹی فیس بک‘ قرار دیا جانے ان کے لیے باعثِ فخر ہے لیکن وہ خود اپنی سروس کو ایسا نہیں سمجھتے۔

’ہم فیس بک کو اپنا کاروباری مخالف نہیں سمجھتے۔ ہم اسے ایک اشتہاری پلیٹ فارم کے طور پر دیکھتے ہیں جبکہ ہم ایک نیٹ ورک ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’ایلو‘ کی آمدن کا ذریعہ اس کی خدمات کے عوض حاصل ہونے والی رقم ہوگی: ’ایک ایپ سٹور کی طرح ہم اپنے فیچرز کے عوض رقم وصول کریں گے۔‘

تاہم ٹیکنالوجی پر تحقیق کرنے والی ایک فرم فوریسٹر کے تجزیہ کار جیمز میکویوی کے خیال میں ایسے نیٹ ورکس کا مفت ہونا ہی ان کی مقبولیت کی وجہ بن سکا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ’سوشل میڈیا پر واٹس ایپ سے انسٹا گرام اور پھر پنٹرسٹ تک، سب کی کامیابی کی وجہ یہی ہے کہ وہ مفت ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’اگر آپ کے دوست کو نیٹ ورک کا رکن بننے کے لیے رقم خرچ کرنا پڑے تو آپ اسے اس کی دعوت نہیں دیں گے۔‘

جیمز کے مطابق ’ایلو سوشل نیٹ ورکنگ کی ایسی دنیا میں داخل ہو رہا ہے جہاں ڈیجیٹل خدمات کے بارے میں صارف کی عادتیں پکّی ہو چکی ہیں۔‘

اسی بارے میں