خودکشی پر مائل افراد کی نشاندہی کرنے والی ایپ بند

تصویر کے کاپی رائٹ Divulgacao
Image caption ’ہم نے مزید سوچ بچار کے لیے اس ایپ کو فی الحال بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے‘

امدادی تنظیم سمیریٹنز نے اس موبائل فون ایپ کو بند کردیا ہے جس کا مقصد ٹویٹر پر مائل بہ خودکشی افراد کی نشاندہی کرنا تھا۔

اس تنظیم نے ریڈار نامی موبائل ایپ کے بارے میں تحفظات کے باعث اسے بند کیا ہے۔

تنظیم نے ان افراد سے معافی مانگی ہے جن کو ریڈار ایپ کے باعث پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

سمیریٹنز کے پالیسی ڈائریکٹر جو فرنز نے ایک بیان میں کہا ’ہم نے مزید سوچ بچار کے لیے اس ایپ کو فی الحال بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔‘

ریڈار ایپ گذشتہ ماہ لانچ کی گئی تھی۔

یہ ایپ ٹویٹر پر مخصوص جملوں پر نظر رکھتی ہے جیسے کہ ’اکیلے رہنے سے عاجز آ گیا ہوں‘، ’اپنے آپ سے نفرت ہے‘، ’افسردہ ہوں‘، ’میری مدد کرو‘ اور ’کسی سے بات کرنی ہے‘۔

جن افراد نے اس سروس کے لیے رجسٹر کروایا ہوا ہے ان کو ایک الرٹ اس وقت ملتا تھا جب رجسٹر ہوئے افراد کو فالو کرنے والا کوئی شخص ان میں سے کوئی جملہ لکھتا تھا۔

اگرچہ ریڈار صرف ان ٹویٹس کو مانیٹر کرتا تھا جن کو سب پڑھ سکتے تھے لیکن کچھ کے لیے ان ٹویٹس کا تجزیہ پریشان کن تھا۔

اسی بارے میں