روسی ہیکر کے بارے میں معلومات پر 30 لاکھ ڈالر کا انعام

تصویر کے کاپی رائٹ FBI
Image caption بوگاچیو اس وقت ایف بی آئی کے سب سے زیادہ مطلوب مجرموں میں سے ایک ہیں

امریکہ نے ایک روسی ہیکر کے بارے میں معلومات دینے والے کے لیے 30 لاکھ ڈالر کے انعام کا اعلان کیا جو کہ سائبر مجرموں کی گرفتاری کے لیے دیے جانے والی اب تک کی سب سے بڑی انعامی رقم ہے۔

یویگنی بوگاچیو کو گذشتہ سال امریکہ میں ایک بڑے سائبر جرم میں سزا سنائی گئی تھی جس میں 100 ملین ڈالر سے زیادہ کی رقم چوری کی گئی تھی۔

انہیں آخری بار روس میں دیکھا گیا جہاں یہ اندازہ لگایا جا رہا ہے کہ وہ آزاد گھوم رہے ہیں۔

انہیں گرفتار کرنا امریکیوں کے لیے بہت مشکل ہے کیونکہ امریکہ کا روس کے ساتھ مجرموں کے تبادلے کا معاہدہ نہیں ہے۔

بوگاچیو جنہیں ’لکی12345‘ یا "slavik" کے ناموں سے بھی جانا جاتا ہے پر الزام ہے کہ وہ ’گیم اوور‘ نامی حملہ آور نیٹ ورک چلاتے تھے جس نے دس لاکھ کمپیوٹرز کو نشانہ بنا کر خراب کیا۔

ان کی کارروائیوں کا نشانہ بننے والے لوگوں کو ایک مال ویئر یا نقصان دہ سافٹ ویئر کو ڈاؤن لوڈ کرنے پر ورغلایا گیا جس نے بعد میں اُن کے کمپیوٹر پر مالیاتی معلومات کو ڈھونڈا۔

یویگنی بوگاچیوکو گذشتہ سال سازش، وائر، بینک اور کمپیوٹر کے 60 دھوکہ دہی کے معاملات اور منی لانڈرنگ کے الزامات میں سزا سنائی گئی جب ایف بی آئی نے اس نیٹ ورک کو بے نقاب کیا۔

بوگاچیو اس وقت ایف بی آئی کے سب سے زیادہ مطلوب مجرموں میں سے ایک ہیں۔

امریکی وزارتِ خارجہ نے کہا کہ ’انعام کی یہ رقم امریکی حکومت کے اس عزم کی تصدیق کرتی ہے کہ جو منظم جرائم میں حصہ لیتے ہیں بے شک وہ آن لائن چھُپ کر یا بیرونِ ملک کارروائیاں کریں انہیں کٹہرے میں لایا جائے گا۔‘

یہ انعام بوگاچیو کے بارے میں معلومات دینے پر دیا جائے جس کے نتیجے میں انہیں گرفتار کیا جا سکے یا سزا دلائی جا سکے۔

روئٹرز کے مطابق ایف بی آئی کے سائبر کرائم ڈویژن کے سربراہ جوزف ڈیمرسٹ نے کہا کہ روسی داخلی سکیورٹی ایجنسی نے اس بات میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے کہ کہ وہ امریکہ کے ساتھ سائبر جرائم میں مل کر کام کرے گی مگر اسے بوگاچیو کے کیس سے نہیں جوڑا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایجنسی 60 دوسرے سائبر گروپس کے بارے میں باخبر ہے جو مختلف ممالک سے جڑے ہیں مگر ان کے بارے میں تفصیلات نہیں بتائیں۔

اسی بارے میں