سیارہ عطارد کا رنگ کالا کیوں ہے؟

تصویر کے کاپی رائٹ nasa
Image caption عطارد کی سطح چاند سے کم روشنی منعکس کرتی ہے

ایک نئی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ سیارہ عطارد کی سطح قریب سے گزرنے والے دمدار ستاروں سے گرنے والی گرد کی وجہ سے کالی ہوئی ہے۔

عطارد بہت کم روشنی منعکس کرتا ہے، تاہم اس کی سطح پر لوہے کی مقدار بہت کم ہے، جس کے باعث اس کی سطح کے کالے ہونے کی وجہ لوہے کے باریک ذرات نہیں ہو سکتے۔

عطارد کی سطح کی رنگت کے راز سے پردہ اٹھانے کے لیے سائنس دانوں نے سب سے پہلے یہ تخمینہ لگایا کہ گزرتے ہوئے دمدار ستاروں سے عطارد پر کس قدر کاربن آلود مواد گر سکتا ہے۔

عطارد دراڑوں کی وجہ سے سات کلومیٹر سکڑ گیا ہے

عطارد پر پانی کی موجودگی کے آثار

اس کے بعد انھوں نے چینی سے لپی ہوئی ایک چٹان پر پروجیکٹائل پھینکے تاکہ کاربن کے سیاہ کرنے کے عمل کی تصدیق کی جا سکے۔

ان کی تحقیق کے نتائج جریدے ’نیچر جیوسائنس‘ میں شائع ہوئے ہیں، اور ان کی مدد سے اس خیال کو تقویت ملتی ہے کہ عطارد کی سطح کی رنگت اربوں برس کے عمل کے دوران دمدار ستاروں سے گرنے والی گرد کی وجہ سے سیاہ پڑ گئی ہے۔

سائنس دانوں کی ٹیم کا کہنا ہے کہ کاربن سے بھرپور شہابِ ثاقب کے ننھے ذرات عطارد سے ٹکراتے رہے ہیں، اور یہی عطارد کی پراسرار سطح کا باعث ہیں۔

تحقیق کار لارنس لِورمور نیشنل لیبارٹری کی ڈاکٹر میگن بروک سائل کہتی ہیں: ’بہت عرصے سے کہا جا رہا تھا کہ عطارد کی سطح سے روشنی کم منعکس ہونے کی وجہ ایک پراسرار سیاہ مادہ ہے۔ لیکن اس سے پہلے اس بات کو نظرانداز کیا گیا تھا کہ عطارد پر دمدار ستاروں سے آنے والا بہت سا مواد گرتا رہتا ہے۔‘

نظامِ شمسی جب تشکیل پا رہا تھا اس وقت جو مواد سورج یا سیاروں کا حصہ نہیں بن سکا، وہ دمدار ستارے بن گیا۔ یہ ستارے سورج کے گرد لمبوترے مدار میں چکر لگاتے ہیں اور سورج کے قریب پہنچ کر ان کا بیشتر حصہ منتشر ہو جاتا ہے۔ اس سے جو گرد پیدا ہوتی ہے اس کا ایک چوتھائی حصہ کاربن پر مشتمل ہوتا ہے۔ سائنس دانوں نے اس حصے کی نمائندگی چینی کے ذرات کی مدد سے کی۔

تجربات سے معلوم ہوا کہ کاربن سیاہ رنگت پیدا کرتی ہے۔ سائنس دانوں نے ناسا کی چار میٹر کی توپ استعمال کر کےپانچ کلومیٹر فی سیکنڈ کی رفتار سے ایک چٹان کے اوپر ننھے پروجیکٹائل پھینکے۔ چٹان پر چینی کا لیپ ٹکراؤ کے بعد پگھل کر کاربن پیدا کر دیتا تھا جس سے چٹان سیاہ پڑ جاتی تھی۔ سائنس دانوں کا خیال ہے کہ یہی عمل عطارد پر بھی ہو رہا ہے۔

تحقیق کے شریک مصنف براؤن یونیورسٹی کے پیٹر شلز کہتے ہیں کہ عطارد ایک رنگ شدہ سیارہ ہے۔

اسی بارے میں