پروفیسر سٹیون ہاکنگ ’ریتھ لیکچرز‘ پیش کریں گے

Image caption بی بی سی کا پروگرام ریتھ لیکچرز سنہ 1948 میں شروع ہوا تھا

ممتاز سائنس دان پروفیسر سٹیون ہاکنگ بی بی سی کے پروگرام ریتھ لیکچرز میں اس سال ’بلیک ہولز‘ پر بات کریں گے۔

پروفیسر ہاکنگ کا کہنا ہے کہ وہ امید کرتے ہیں کہ ان کے لیکچر کو سن کر لوگوں میں سائنس سے متعلق دلچسپی بڑھے گی۔

پروگرام میں لوگوں کی جانب سے بھیجے گئے سوالات کے جواب بھی دیے جائیں گے۔

پروفیسر ہاکنگ کا کہنا ہے کہ ’میں بلیک ہولز کی قابلِ قدر خصوصیات کا ذکر کروں گاجیسے کہ کچھ چھوٹے بلیک ہولز دراصل چمکدار ہوتے ہیں۔‘

انھوں نے کہا: ’ہمیں سائنس کی ان غیرمعمولی کہانیوں کو بتانے سے کھبی نہیں رکنا چاہیے اور میں امید کرتا ہوں کہ میرے لیکچر سے نئی نسل میں ایسے خیالات اجاگر کرنے کے لیے حوصلہ افزائی ہوگی جو ہمیں اس دنیا کو سمجھنے میں مدد گار ثابت ہوں گے اور وہ دریافت کے عمل سے کبھی نہیں گھبرائیں گے۔‘

واضح رہے کہ بی بی سی کا پروگرام ریتھ لیکچر سنہ 1948 میں شروع ہوا تھا اور سب سے پہلے پروگرام میں فلسفی برٹرینڈ رسل نے گفتگو کی تھی۔

اس پروگرام میں نوبل انعام یافتہ سیاستدان آنگ سان سوچی، ممتاز سرجن اتل گوانڈے اور معروف مصور گریسن پیری سمیت کئی نامور شخصیات شرکت کر چکی ہیں۔

ریتھ لیکچر پروگرام کو بی بی سی ریڈیو فور پر نشر کیا جاتا ہے اور پروفیسر ہاکنگ کا لیکچر اس موقعے پر نشر کیا جا رہا ہے جب بی بی سی ریڈیو فور البرٹ آئن سٹائن کے نظریۂ اضافت کی 100ویں سالگرہ منانے کا ارادہ رکھتا ہے۔

پروفیسر ہاکنگ کے اس پروگرام میں شرکت کا اعلان ریڈیو فور کے کنٹرولر گنتھ ویلیمز نے بی بی سی کے ڈائریکٹر جنرل ٹونی ہال کی موجودگی میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کیا۔

اس موقعے پر انھوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ پروفیسر ہاکنگ کے لیکچر والی اقساط بھی پروگرام کی گذشتہ اقساط کی طرح بی بی سی کے سامعین میں مقبول ہوں گی۔

اسی بارے میں