آسٹریلوی مینڈھے کی حجامت، 40 کلو اُون اتری

Image caption قومی چیمپییئن ایئن ایلکنز کو مینڈھے کی حجامت بنوانے کے لیے ہنگامی طور پر بلوایا گیا تھا

آسٹریلیا کے دارالحکومت کینبرا کے قریب سے ملنے والی ایک مینڈھے کی اون منڈوا دی گئی ہے اور اس مقصد کے لیےاون تراشی کے قومی چیمپیئن ایئن ایلکنز کی خدمات حاصل کی گئی ہیں۔

جانوروں کے حقوق کے لیے کام کرنے والے حکام نے کہا تھا کہ مینڈھے پر اون بہت زیادہ ہونے کی وجہ سے اُس کی جان کو خطرہ لاحق ہے۔

جانوروں کے حقوق کی تنظتم آر ایس پی سی اے کا کہنا ہے کہ مینڈھے کی حجامت کے بعد 40 کلو اون نکلی ہے جو اب تک کسی ایک جانور سے اتری گئی سب سے زیادہ اون ہے۔

قومی چیمپییئن ایئن ایلکنز کو مینڈھے کی حجامت بنوانے کے لیے ہنگامی طور پر بلوایا گیا تھا۔

ان کا کہنا ہے کہ اس مینڈھے کے جسم پر موجود اُون تراشنا ان کے 35 سالہ تجربے میں اب تک کا سب سے بڑا چیلنج تھا۔۔

ایلکن چار بار ملک میں بھیڑوں کی اون کی تراش کا مقابلہ جیتنے کا اعزاز حاصل کر چکے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اس مینڈھے کی جسامت ایک عام مینڈھے سے پانچ گنا زیادہ ہے

خیال رہے کہ اگر بھیڑ یا مینڈھے کے بالوں کی متواتر تراش خراش نہ کی جائے تو اس کی صحت کو خطرناک قسم کے مسائل کا سامنا ہو جاتا ہے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق جانوروں کے حقوق کے لیے قائم ادارے آر ایس پی سی اے کی سربراہ وین ڈینگ کہتی ہیں کہ اس مینڈھے کی جسامت ایک عام مینڈھے سے پانچ گنا زیادہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کئی سال تنہائی میں گزارنے کے بعد اب یہ مینڈھا انسانوں درمیان آ کر دباؤ کا شکار دکھائی دے رہا ہے۔

سنہ 2004 میں بھی نیوزی لینڈ میں شرک نامی بھیڑ چھ سال کی گمشدگی کے بعد ملی تھی۔ شرک کی تراش خراش کو ٹی وی پر براہ راست دکھایا گیا تھا جس کے بعد معلوم ہوا تھا کہ ان کا 27 کلو وزن کم ہوگیا تھا۔ اس بھیڑ کا انتقال سنہ 2011 میں ہوا تھا۔

اسی بارے میں