اینڈروئڈ نظام کے سکرین لاک میں نقص دریافت

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اینڈروئڈ کے تقریباً 21 فیصد صارف ایسا آپریٹنگ نظام استعمال کر رہے ہیں جس میں یہ خرابی موجود ہے

امریکہ میں یونیورسٹی آف ٹیکسس کے محققین نے اینڈروئڈ آپریٹنگ نظام میں ایسے نقص کا پتہ چلایا ہے جو کسی موبائل کو ان لاک کیے بغیر صارف کی اس تک رسائی ممکن بنا دیتا ہے۔

محققین کے مطابق اگر آپ اس نظام کے تحت کام کرنے والی کسی موبائل فون یا ٹیبلٹ کو کھولنے کی کوشش کے دوران غیرمعمولی حد تک طویل پاس ورڈ تحریر کریں تو لاک سکرین مخصوص حالات میں کریش کر جاتی ہے۔

اس انکشاف کے بعد گوگل نے بدھ کو یہ نظام استعمال کرنے والی اپنی نیکسس مصنوعات کے لیے سکیورٹی پیچ جاری کیا ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ اسے فی الحال کسی بھی صارف کے اس نقص سے متاثر ہونے کی اطلاع نہیں ملی ہے۔

لاک سکرین کے کریش ہونے کے بعد محققین فون کے ڈیٹا اور اس میں موجود ایپلیکیشنز تک رسائی پانے میں کامیاب رہے۔

اینڈروئڈ کے تقریباً 21 فیصد صارف ایسا آپریٹنگ نظام استعمال کر رہے ہیں جس میں یہ خرابی موجود ہے۔

امریکی محققین کا کہنا ہے کہ اگر صارف نے فون لاک کرنے کے لیے پاس ورڈ کی جگہ پن کوڈ یا لاکنگ پیٹرن استعمال کیا ہے تو وہ اس نقص سے متاثر نہیں ہو گا۔

اسی بارے میں