وارد ٹیلی کام اور موبی لنک کے انضمام کا اعلان

تصویر کے کاپی رائٹ Syntax
Image caption ابوظہبی میں وارد ٹیلی کام اور موبی لنک کے درمیان انضمام کے معاہدے پر دستخط ہوئے ہیں

پاکستان میں موبائل سروس فراہم کرنے والی دو بڑی کمپنیوں وارد ٹیلی کام اور موبی لنک نے انضمام کا اعلان کیا ہے۔

جمعرات کو ابوظہبی میں وارد ٹیلی کام اور موبی لنک کے درمیان اس معاہدے پر دستخط ہوئے ہیں۔

پاکستان میں بلیک بیری سروس معطل کرنے کا فیصلہ

یہ معاہدہ پاکستان میں ٹیلی کام کے نگران ادارے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کی جانب سے منظوری سے مشروط ہے اور منظوری کے بعد انضمام کا عمل چھ ماہ میں مکمل ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق اس معاہدے کے بعد موبی لنک اور وارد کے مجموعی صارفین کی تعداد 4 کروڑ 50 لاکھ سے بھی بڑھ جائے گی۔

انضمام کے بعد موبی لنک کے صارفین فور جی اور وارد کے صارفین تھری جی کی سہولت استعمال کر سکیں گے۔

پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کے ترجمان خرم علی مہران نے بی بی سی کو بتایا کہ ابھی یہ معاملہ پی ٹی اے کے سامنے نہیں آیا ہے کیونکہ پہلے اس کی توثیق سکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن سے کروائی جائے گی۔

انھوں نے کہا کہ ’ایس ای سی پی کے بعد یہ معاملہ پی ٹی اے کے سامنے آئے گا پھر اصول و ضوابط دیکھ کر انضمام کے فیصلے کی منظوری دی جائے گی۔‘

موبی لنک پاکستان میں صارفین کے اعتبار سے سب سے بڑی کمپنی ہے جس کے پاس تھری جی کا لائسنس بھی ہے۔

ادھر وارد ٹیلی کام کے پوسٹ پیڈ کسٹمرز کی تعداد سب سے زیادہ ہے اور اس پاس تھری جی نہیں البتہ جدید ترین فور جی کا لائسنس ہے۔

اسی بارے میں