ٹوئٹر کی صارفین کو اکاؤنٹس ہیک کیے جانے کی تنبیہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ٹوئٹر کی جانب سے کی جانے والی ای میل میں لکھا ہے کہ یہ ہیکرز ممکنہ طور پر حکومت کے ساتھ منسلک ہو سکتے ہیں

سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹوئٹر نے اپنے کئی صارفین کو تنبیہ کی ہے کہ ان کے اکاؤنٹس کو ’حکومت کے ساتھ منسلک ہیکرز‘ کی جانب سے ہیک کیے جانے کا امکان ہے۔

یہ پہلی بار ہے کہ سوشل میڈیا کمپنی نے اس قسم کی کوئی وارننگ جاری کی ہے۔

ٹوئٹر کی جانب سے صارفین کو ای میل کے ذریعے آگاہ کیا گیا ہے کہ ہیکرز نے ممکنہ طور پر ان کے ای میل اڈریس اور آئی پی اڈریس یا موبائل فون نمبرز کی معلومات حاصل کی ہے جو انھوں نے حال ہی میں جمع کرنے شروع کیے ہیں۔

تاہم جن اکاؤنٹس پر ہیک کیے جانے کا شک ہے کی تعداد واضح نہیں ہے۔

کینیڈا کی ایک تنظیم ’کولڈ ہک‘ کا کہنا ہے کہ انھیں ٹوئٹر کی جانب سے وارنگ موصول ہوئی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

ٹوئٹر کی جانب سے کی جانے والی ای میل میں لکھا ہے کہ ’ہمارے خیال میں یہ ہیکرز جو ممکنہ طور پر حکومت کے ساتھ منسلک ہو سکتے ہیں ای میل اڈریس، آئی پی اڈریس اور یا فون نمبرز جیسی معلومات حاصل کرنے کی کوشش کر سکتے ہیں۔‘

اس ای میل میں مزید کہا گیا ہے کہ ’اس وقت ہمارے پاس اس بات کے ثبوت نہیں ہیں کہ انھوں نے آپ کے اکاؤنٹ ہیک کیے ہیں لیکن ہم سنجیدگی سے اس مسلہ کی تحقیقات کر رہے ہیں۔اگر اس کے علاوہ کوئی معلومات ہمارے پاس ہوتی تو ہم ضرور آپ کو مطلع کرتے لیکن اس وقت ہمارے پاس کوئی اضافی اطلاع نہیں ہے۔‘

بعض ٹیکنالوجی ماہرین کا کہنا ہے کہ جن ہیکرز نے گذشتہ سال سونی کمپنی کے کمپیوٹر نیٹ ورک کو ہیک کرنے کے بعد بڑی تعداد میں خفیہ معلومات کو افشاں کیا تھا کو شمالی کوریا کی حکومت کی جانب سے حمایت حاصل تھا۔

اسی بارے میں