جنوبی کوریا میں زیکا وائرس کے پہلے کیس کی تصدیق

تصویر کے کاپی رائٹ Oxitec
Image caption زیکا وائرس ایک خاص قسم کے مچھروں سے پھیلتا ہے

جنوبی کوریا نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ایک شہری جو حال ہی میں برازیل سے واپس آیا تھا وہ زیکا وائرس سے متاثرہ ہے۔

سینٹر فور ڈزیز کونٹرول اینڈ پریوینشن کا کہنا ہے کہ منگل کو اس کے مرض کی تشخیص ہوئی اور ان کا اب گوانگجو شہر میں علاج ہو رہا ہے۔

زیکا وائرس جس کی پیداواری مچھروں سے ہوتی ہے کو ورلڈ ہیلتھ اورگنائزیشن نے ایک عالمی سطح پر صحت کی ايمرجنسی قرار دیا ہے۔

یہ بیماری تیزی سے برازیل اور امریکی براعظم میں پھیل چکی ہے اور شک کیا جا رہا ہے کہ بچوں کی پیدائش کے دوران بھی اسی وائرس کی وجہ سے بچوں میں نقص سامنے آ رہے ہیں۔

البتہ ڈبلیو ایچ او کے ماہرین نے اس وائرس اور میکروسیفلی کی بیماری کے درمیان کوئی بھی رشتہ ڈھونڈنے کے خلاف تنبیہ دی ہے ۔ یہ بات ابھی ثابت نہیں ہوئی ہے۔ کچھ ایشائی ممالک میں بھی زیکا انفیکشن کی نشاندہی کی گئی ہے۔

جنوبی کوریا کا یونہاپ خبر رساں ادارے کے مطابق متاثرہ شخص کو طبی نگرانی میں رکھا گیا ہے اور گھر واپس آنے کے بعد ان کی ہر نقل و حرکت پر بھی نظر رکھی جا رہی ہے۔

اسی بارے میں