معمر افراد بھی انٹرنیٹ کی جانب مائل

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption او این ایس کے اعدادوشمار بتاتے ہیں کہ بہت سے معمر افراد میں انٹرنیٹ کے استعمال مین ایک قسم کی ہچک ہے

برطانیہ کے سرکاری ریکارڈ کے ادارے آفس فار نیشنل سٹیٹسٹکس (او این ایس) کا کہنا ہے کہ 75 سال سے زیادہ عمر والے دو تہائی افراد نے کبھی انٹرنیٹ کا استعمال نہیں کیا تھا۔

اس کے باوجود اس عمر کے افراد میں نیٹ کے استعمال میں اضافہ ہو رہا ہے اور ادارے کے مطابق سنہ 2011 کے بعد سے ان کی تعداد دگنی ہو گئی ہے۔

اس میں یہ اعداد وشمار بھی پیش کیے گئے ہیں کہ ایک چوتھائی معذور افراد ابھی تک انٹرنیٹ تک نہیں پہنچ سکے ہیں۔

معذور افراد کے لیے کام کرنے والوں نے اس تعداد کو ’قابل افسوس‘ بتایا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ برطانیہ کے تقریبا 88 فی صد افراد نے گذشتہ تین ماہ کے درمیان نیٹ کا استعمال کیا ہے۔

Image caption معمر خواتین کے انٹرنیٹ پر جانے میں اضافہ ہوا ہے

او این ایس کے مطابق رواں سال کے پہلے تین مہینوں میں لندن کے 91 فی صد افراد پابندی سے آن لائن پر تھے اس کے برعکس شمالی آئرلینڈ میں صرف 82 فی صد افراد ہی پابندی سے نیٹ پر تھے۔

اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ سنہ 2011 کے بعد 75 سال سے زیادہ عمر کی خواتین میں نیٹ کے استعمال میں 169 فی صد کا اضافہ ہوا ہے۔ بہرحال اس میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اس عمر کے لوگ مستقل طور پر نیٹ کا استعمال نہیں کرتے اور رواں سال کے پہلے تین ماہ میں پانچ فی صد افراد نے نیٹ کا استعمال ترک کر دیا ہے۔

او این ایس کے پیٹر لی نے کہا ’ہر چند کہ ہم نے حالیہ برسوں میں ہر عمر کے لوگوں میں نیٹ کے استعمال میں اضافہ دیکھا ہے لیکن بہ سے معمر اور معذور افراد ابھی تک آن لائن نہیں ہوسکے ہیں۔‘

معذوروں کے فلاحی ادارے ’سکوپ‘ کے چیف ايگزکٹیو مارک ایٹکنسن نے کہا کہ ’یہ افسوسناک ہے کہ 25 فی صد معذوروں نے ابھی تک نیٹ کا استعمال نہیں کیا ہے اور یہ بڑی دیجیٹل تقسیم ہے۔‘

اسی بارے میں