ونڈوز اپ ڈیٹ پر مائیکروسافٹ ہرجانہ دینے پر تیار

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ٹیری گولڈسٹین کا کمپیوٹر اپ ڈیٹ کے بعد ’رینگنے کی حد تک سست‘ ہوگیا تھا

مائیکروسافٹ نے اس امریکی خاتون کو دس ہزار ڈالر بطور ہرجانہ ادا کرنے کی ہامی بھری ہے جس کا کمپیوٹر ونڈوز 10 کے ایپ ڈیٹ کے بعد قابلِ استعمال نہیں رہا تھا۔

امریکی ریاست کیلیفورنیا سے تعلق رکھنے والی ٹیری گولڈسٹین کا کہنا تھا کہ ان کے کمپیوٹر کا آپریٹنگ نظام ونڈوز 7 تھا اور خودبخود ان کی اجازت کے بغیر اسے ونڈوز 10 سے اپ ڈیٹ کرنے کی کوشش ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ اس اپ ڈیٹ کی وجہ ان کے کمپیوٹر نے کام کرنا چھوڑ دیا اور وہ اس کو استعمال کرنے کے قابل نہیں رہیں۔

مائیکروسافٹ کا کہنا تھا کہ اس نے قانونی اخراجات سے بچنے کے لیے یہ مقدمہ نہ لڑنے کا فیصلہ کیا ہے اور عدالت سے باہر تصفیے کو ترجیح دی ہے۔

خیال رہے کہ ونڈوز 10 مائیکروسافٹ کا نیا آپریٹنگ سسٹم ہے اور یہ ونڈوز 7 اور ونڈوز 8 نظام والے کمپیوٹرز کے لیے بلامعاوضہ دستیاب ہے۔

تاہم بہت سے افراد اسے اپ گریڈ نہیں کرتے کیونکہ ان کا ہارڈویئر پرانا ہونے کی وجہ سے ونڈوز 10 اس پر نہیں چل سکتی۔

فروری میں کمپنی نے ونڈوز 10 کے ساتھ سکیورٹی اپ ڈیٹس شامل کی گئی تھیں اور اسے ’تجویز کردہ اپ ڈیٹ‘ قرار دیا گیا تھا، جس کا مطلب ہے کہ یہ خودکار طریقے سے ڈاؤن لوڈ ہوں گی اور جبکہ تک صارف انھیں بلاک نہ کریں یہ انسٹال ہوجائیں گی۔

اخبار دی سیاٹل ٹائمز کے مطابق ٹیری گولڈسٹین کا کمپیوٹر اپ ڈیٹ کے بعد ’رینگنے کی حد تک سست‘ ہوگیا اور مائیکروسافٹ کی کسٹمر سپورٹ نے ان کا مسئلہ حل نہیں کیا۔

ٹیری گولڈسٹین نے اخبار کو بتایا کہ ’مجھے ونڈوز 10 کی جانب سے کوئی جواب موصول نہیں ہوا۔ کسی نے مجھ سے یہ بھی نہیں پوچھا کہ کیا مجھے اپ ڈیٹ چاہیے کہ نہیں۔‘

اسی بارے میں