بلڈ پریشر اور زیابیطس پر کامیاب تجربے کا دعویٰ

تصویر کے کاپی رائٹ

پاکستان کے شہر لاہور کے سائنس دانوں نے چار ہزار فٹ کی بلندی پر بلڈ پریشر اور شوگر کنٹرول کرنے کا کامیاب اور منفرد تجربہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

یہ تجربہ لاہور میں اپلائیڈ سائنسز کے پاکستانی سائنس دانوں نے کیا جس کی قیادت پنجاب یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر اورنگزیب الہافی نے کی۔ انھوں نے ایک مادہ حاملہ خرگوش کو لے کر لاہور کے والٹن ائرپورٹ سے اڑان بھری اور چار ہزار فٹ کی بلندی تک چلے گئے۔

لاہور سے صحافی عبدالناصر کے مطابق ڈاکٹر اورنگزیب نے بتایا ہے کہ اپلائیڈ سائنسز کی تاریخ میں پہلی مرتبہ مقناطیسی شعاؤں کی موجودگی میں خرگوش کے بلڈ پریشر اور شوگر کو کنٹرول میں رکھنے کا کامیاب تجربہ کیا گیا ہے۔

ڈاکٹر اورنگ زیب نے بتایا کہ اس کامیاب تجربے سے فضا میں بلڈ پریشر، شوگر، حرکی اعصاب، حسی اعصاب کو کنٹرول کرنے کے ساتھ ساتھ دوران حمل یا پیدائش کے بعد ہونے والی معذوری کے روک تھام میں مدد مل سکے گی۔

انھوں نے بتایا کہ اس تحقیق سے طبیعات، علم کیمیا، سپیس سائنسز، حیاتیات، الیکٹرانکس اور انوائرنمنٹل سائنسز میں ریسرچ کے نئے پہلو جنم لیں گے۔

اس تجربے اور تحقیق کے دوران کامسیٹکس سے ڈاکٹر اعظم شیخ، ڈاکٹر شاہین خان اور دیگر اداروں کے محققین بھی ڈاکٹر اورنگزیب کے ساتھ تھے۔

پنجاب یونیورسٹی کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق اپنی نوعیت کے اس منفرد تجربے کو امریکی ادارہ نیشنل پوسٹ ڈاکٹورل سائنٹیفک اتھارٹی اور کیمبرج یونیورسٹی نے براہ راست مانیٹر کیا۔

اسی بارے میں