چٹاگانگ ٹیسٹ میں بنگلہ دیشی بلے بازوں کی عمدہ بیٹنگ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption معین علی نے ایک ہی اوور میں دو وکٹیں لیں

بنگلہ دیش کے شہر چٹاگانگ میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن انگلش کرکٹ ٹیم کے 293 رنز پر آؤٹ ہونے کے بعد بنگلہ دیش نے اپنی پہلی اننگز میں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 221 رنز بنا لیے۔

جب کھیل ختم ہوا تو شکیب الحسن 31 رنز بنا کر کریز پر موجود تھے اور ان کا ساتھ شفیع الاسلام دے رہے تھے۔

٭ میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

بنگلہ دیش کی جانب سے تمیم اقبال نے نصف سنچری سکور کی جبکہ مشفق الرحیم نے 48 رنز کی اننگز کھیلی۔

جمعے کو بنگلہ دیش کی جانب سے تمیم اقبال اور امر القیس نے اننگز شروع کی تو 29 کے سکور پر مہمان ٹیم کو پہلی کامیابی امر القیس کی وکٹ کی شکل میں ملی۔

انھیں معین علی نے بولڈ کیا۔ ان کی جگہ آنے والے مومن الحق بھی اسی اوور میں بغیر کوئی رن بنائے کیچ آؤٹ ہو گئے۔

تیسری وکٹ کے لیے محمود اللہ اور تمیم کے درمیان 90 رنز کی شراکت ہوئی جسے عادل رشید نے محمود اللہ کو کیچ کروا کے توڑا۔

تمیم اقبال نے 78 رنز کی اننگز کھیلی جس کا خاتمہ بیٹی نے کیا۔

انگلینڈ کو دن کی پانچویں اور آخری کامیابی کھیل کے اختتام سے دو اوورز قبل ملی جب بین سٹوکس نے مشفق الرحیم کو نصف سنچری سے دو رنز کی دوری پر آؤٹ کر دیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے 18 سالہ مہدی حسن نے ہہلی اننگز میں چھ وکٹیں لیں

اس سے قبل انگلینڈ کی جانب سے کرس ووکس اور عادل رشید نے پہلی نامکمل اننگز دوبارہ شروع کی تو ووکس گذشتہ روز کے سکور 258 میں کسی اضافے کے بغیر آؤٹ ہوگئے۔

انگلینڈ کی نویں وکٹ 289 کے سکور پر گری جب عادل رشید 26 رنز بنانے کے بعد تیج الاسلام کی دوسری وکٹ بنے۔

کرس براڈ کو اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے مہدی حسن نے کیچ کروا کر انگلش اننگز کا خاتمہ کیا۔

18 سالہ مہدی نے اس اننگز میں چھ وکٹیں لیں اور سب سے کامیاب بولر رہے۔

ان کے علاوہ تیج الاسلام اور شکیب الحسن نے دو، دو وکٹیں لیں۔

اسی بارے میں