پاکستان کی 133 رنز سے جیت ، یاسر ایک بار پھر فتح گر

تصویر کے کاپی رائٹ Tom Dulat/Getty Images
Image caption یاسر شاہ نے بار پھر عمدہ باولنگ کا مظاہرہ کیا

لیگ سپنر یاسر شاہ ایک بار پھر فتح گر ثابت ہوئے۔

ان کی میچ میں 10 وکٹوں کی شاندار کارکردگی نے پاکستان کو ویسٹ انڈیز کے خلاف ابوظہبی ٹیسٹ میں 133 رنز کی جیت سے ہمکنار کردیا۔

اس کے ساتھ ہی تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں پاکستان کو دو صفر کی ناقابل شکست برتری حاصل ہوگئی ہے۔

پاکستان نے دبئی میں کھیلا گیا پہلا ٹیسٹ 56 رنز سے جیتا تھا۔

تیسرا اور آخری ٹیسٹ 30 اکتوبر سے شارجہ میں کھیلا جائے گا۔

ابوظہبی ٹیسٹ کے آخری دن ویسٹ انڈیز کو جیتنے کے لیے 285 رنز درکار تھے جبکہ پاکستان کی نظریں 6 وکٹوں پر لگی ہوئی تھیں۔

ویسٹ انڈیز کی ٹیم گزشتہ روز کے سکور میں 208 رنز کا اضافہ کرکے چائے کے وقفے سے پہلے 322 رنز پر آؤٹ ہوگئی۔

یاسر شاہ نے 124 رنز دے کر 6 وکٹیں حاصل کیں۔

اس میچ میں انھوں نے210 رنز کے عوض 10 وکٹیں حاصل کیں۔

بلیک ووڈ اور روسٹن چیس کی 63 رنز کی شراکت یاسر شاہ نے چیس کو سرفراز احمد کے ہاتھوں کیچ کراکر ختم کی۔ وہ 20 رنز بناسکے۔

بلیک ووڈ صرف پانچ رنز کی کمی سے اپنی دوسری ٹیسٹ سنچری مکمل نہ کرسکے۔ انھیں یاسر شاہ نے بولڈ کردیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Tom Dulat/Getty Images
Image caption اس سے قبل اس نے 2002 میں شارجہ میں کھیلی گئی دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز دو صفر سے جیتی تھی

بلیک ووڈ کی 95 رنز کی اننگز میں گیارہ چوکے شامل تھے۔ انھوں نے شائے ہوپ کے ساتھ چھٹی وکٹ کی شراکت میں ستاون رنز کا اضافہ کیا۔

یاسر شاہ نے اننگز میں اپنی پانچویں وکٹ کپتان جیسن ہولڈر کو 20 رنز پر ایل بی ڈبلیو کرکے حاصل کی۔

یہ آٹھواں موقع ہے کہ یاسر شاہ نے کسی ٹیسٹ کی ایک اننگز میں پانچ یا زائد وکٹیں حاصل کی ہیں۔

شائے ہوپ اور بشو چھیاسی گیندیں کھیل کر 45 رنز کا اضافہ کرنے میں کامیاب ہوئے اس دوران سرفراز احمد نے یاسر شاہ کی گیند پر بشو کو سٹمپ کرنے کا موقع بھی ضائع کیا تاہم ذوالفقار بابر اس میچ میں اپنی پہلی وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے جب انھوں نے شائے ہوپ کو 41 کے اسکور پر یونس خان کے ہاتھوں کیچ کرادیا۔

یاسر شاہ کی کمنز کے خلاف ایل بی ڈبلیو کی اپیل پر امپائر مائیکل گف نے انھیں آؤٹ دے دیا لیکن کمنز نے ریویو لیا اور یہ فیصلہ ان کے حق میں گیا ۔ اسطرح یہ اس میچ میں مائیکل گف کا چھٹا فیصلہ تھا جو غلط ثابت ہوا۔

یاسر شاہ نے اننگز میں چھٹی اور میچ میں دسویں وکٹ کمنز کو صفر پر بولڈ کرکے حاصل کرڈالی۔

یہ دوسرا موقع ہے کہ یاسر شاہ نے ٹیسٹ میچ میں دس وکٹیں حاصل کی ہیں۔

ویسٹ انڈیز کی گرنے والی آخری وکٹ بشو کی تھی جو 26 رنز بناکر ذوالفقار بابر کی گیند پر مصباح الحق کے ہاتھوں کیچ ہوئے ۔

پاکستان نے ویسٹ انڈیز کے خلاف متحدہ عرب امارات میں دوسری ٹیسٹ سیریز جیتی ہے۔

اس سے قبل اس نے 2002 میں شارجہ میں کھیلی گئی دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز دو صفر سے جیتی تھی۔

پاکستانی ٹیم کو متحدہ عرب امارات میں آسٹریلیا کے خلاف دو ٹیسٹ میچز ہارنے کے علاوہ کسی ٹیسٹ سیریز میں شکست نہیں ہوئی ہے ۔اس نے سات سیریز جیتی ہیں اور تین برابر رہی ہیں۔

مصباح الحق جنھوں نے اس ٹیسٹ میں عمران خان کا پاکستان کی طرف سے سب سے زیادہ 48 ٹیسٹ میچوں میں کپتانی کا ریکارڈ برابر کیا ہے ابتک 24 ٹیسٹ جیت چکے ہیں ۔عمران خان نے 14 ٹیسٹ میچوں میں کامیابی حاصل کی تھی۔