شارجہ: پاکستان کو پانچ وکٹیں، ویسٹ انڈیز کو 39 رنز درکار

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں پاکستان کو دو صفر کی برتری حاصل ہے

شارجہ میں کھیلے جانے والے تیسرے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن کے کھیل کے اختتام پر ویسٹ انڈیز نے پاکستان کے خلاف پانچ وکٹوں کے نقصان پر 114 رنز بنا لیے۔

چوتھے دن کے کھیل کے اختتام پر بریتھ ویٹ اور شین ڈوروچ کریز پر موجود تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان شارجہ ٹیسٹ بچانے کی کوشش میں مصروف

چار نصف سنچریاں لیکن پاکستان بڑے سکور میں ناکام

ویسٹ انڈیز کی جانب سے بریتھ ویٹ اور شین ڈوروچ نے چھٹی وکٹ کی شراکت میں 47 رنز بنائے۔

ویسٹ انڈیز کو یہ میچ جیتنے کے لیے مزید 39 رنز کی ضرورت ہے اور دوسری اننگز میں اس کی پانچ وکٹیں باقی ہیں۔

پاکستان کی جانب سے یاسر شاہ نے دوسری اننگز میں تین اور وہاب ریاض نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اظہر علی نروس نائنٹیز کا شکار ہو کر 91 بنانے کے بعد کیچ ہوئے

اس سے قبل پہلی اننگز میں 56 رنز کے خسارے میں جانے والی پاکستانی ٹیم کھیل کے چوتھے دن دوسری اننگز میں 208 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

پاکستان کی دوسری اننگز میں اظہر علی کے علاوہ کوئی بھی بلے باز جم کر نہ کھیل سکا۔

بدھ کو آؤٹ ہونے پہلے پاکستانی کھلاڑی سرفراز احمد تھے جو 42 رنز بنانے کے بعد بشو کی گیند پر کیچ ہوئے۔

انھوں نے اظہر علی کے ساتھ مل کر پانچویں وکٹ کے لیے 86 رنز کی شراکت قائم کی۔

ان کی جگہ آنے والے محمد نواز 19 رنز بنا سکے اور بشو کی اس میچ میں دوسری وکٹ بنے۔

بشو نے ہی اظہر علی کو بھی آؤٹ کیا جو نروس نائنٹیز کا شکار ہو کر 91 بنانے کے بعد براوو کے ہاتھوں کیچ ہو گئے جبکہ محمد عامر رن آؤٹ ہوئے۔

وہاب ریاض ویسٹ انڈیز کپتان جیسن ہولڈر کی چوتھی وکٹ بنے جب انھوں نے ایک رن بنا کر ہولڈر کو کیچ دے دیا۔ ہولڈر نے ہی یاسر شاہ کو ایل بی ڈبلیو کر کے پاکستانی اننگز کا خاتمہ کیا۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے جیسن ہولڈر نے پانچ، بشو نے تین اور روسٹن چیز نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ویسٹ انڈین کپتان جیسن ہولڈر نے دوسری اننگز میں پانچ وکٹیں حاصل کی ہیں

دوسری اننگز میں پاکستانی ٹیم آغاز سے ہی مشکلات کا شکار رہی اور 56 رنز کی برتری ختم کرنے سے پہلے ہی پاکستان کی چار وکٹیں گر چکی تھی۔

دوسری اننگز میں سمیع اسلم 17، کپتان مصباح الحق چار جب کہ یونس خان اور اسد شفیق بغیر کوئی سکور کیے پویلین لوٹ گئے۔

ویسٹ انڈیز کی ٹیم پہلی اننگز میں 337 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی اور 13 ٹیسٹ میچوں کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ ویسٹ انڈیز نے اپنی حریف ٹیم کے خلاف پہلی اننگز میں برتری حاصل کی۔

ویسٹ انڈیز کی اننگز کی خاص بات کریگ بریتھ ویٹ کی شاندار سنچری تھی۔ وہ 142رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔ اس طرح وہ ٹیسٹ کرکٹ میں ویسٹ انڈیز کے لیے اننگز کے آغاز سے اختتام تک ناٹ آؤٹ رہنے والے پانچویں ویسٹ انڈین اوپنر بھی بن گئے۔

پاکستان کی جانب سے وہاب ریاض پانچ وکٹوں کے ساتھ نمایاں رہے جبکہ محمد عامر نے تین جب کہ یاسر شاہ اور ذوالفقار بابر نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں