ہیملٹن ٹیسٹ: بابراعظم پہلی سنچری سے محروم، ساؤدی کی چھ وکٹیں

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بابراعظم جو اپنا تیسرا ٹیسٹ کھیل رہے ہیں پہلی ٹیسٹ سنچری مکمل نہ کرسکے

بابراعظم کی ذمہ دارانہ بیٹنگ نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کو بہت کم سکور پر آؤٹ ہونے سے بچا لیا، جو ہیملٹن ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں 216 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

بابراعظم نے 90 رنز کی اننگز کھیلی اور آؤٹ نہیں ہوئے۔

جواب میں نیوزی لینڈ کی ٹیم 55 رنز کی برتری حاصل کرسکی جس کے لیے وہ فاسٹ بولر ٹم ساؤدی کی شکر گزار تھی جنھوں نے چھ وکٹیں حاصل کیں۔

٭ میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

میچ کے تیسرے دن بارش کی وجہ سے صرف 38.1 اوورز کا کھیل ہی ممکن ہوسکا۔

پاکستانی ٹیم نے اپنے گذشتہ روز کے سکور میں 140 رنز کا اضافہ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ٹم ساؤدی اب تک پانچ وکٹیں حاصل کر چکے ہیں

بابراعظم اور سرفراز احمد نے چھٹی وکٹ کی شراکت میں 74 رنز بنائے۔ سرفرازاحمد جو بڑے اعتماد سے بیٹنگ کررہے تھے41 رنز بناکر سلپ میں راول کے ہاتھوں کیچ ہوگئے۔ یہ ویگنر کی اننگز میں تیسری وکٹ تھی۔

سہیل خان نے ایک بار پھر اپنی بیٹنگ سے نیوزی لینڈ کے بولرز کی مایوسی میں اضافہ کردیا۔

کرائسٹ چرچ میں جارحانہ 40 رنز کی اننگز کے بعد انھیں بیٹنگ میں آٹھویں نمبر پر بھیجا گیا اور انھوں نے ایک جارحانہ انداز میں کھیلتے ہوئے دو چھکوں اور چار چوکوں کی مدد سے37 رنز بنائے اور بابراعظم کے ساتھ ساتویں وکٹ کی شراکت میں67 رنز سکور کیے۔

ان کے آؤٹ ہونے کے بعد میزبان بولرز کو پاکستانی اننگز سمیٹنے میں مشکل نہیں ہوئی۔ آخری چار وکٹیں صرف 24 رنز کا اضافہ کر سکیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption بارش کے باعث تیسرے دن کا کھیل مقررہ وقت سے قبل ہی ختم کرنا پڑا

عمران خان کی آٹھویں ٹیسٹ میں پہلی بار بیٹنگ آئی اور انھوں نے چھ رنز بنائے لیکن وہ بابراعظم کی سنچری مکمل نہ کراسکے۔

بابراعظم جو اپنا تیسرا ٹیسٹ کھیل رہے ہیں پہلی ٹیسٹ سنچری مکمل نہ کرسکے اور دس چوکوں کی مدد سے 90 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔

ٹم ساؤدی نے اپنے کریئر کی تیسری بہترین بولنگ کرتے ہوئے 80 رنز دے کر چھ وکٹیں حاصل کیں لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ آٹھ سال پہلے اپنے اولین ٹیسٹ میں پانچ وکٹیں حاصل کرنے کے بعد ساؤدی نے ہوم گراؤنڈ پر اب پہلی مرتبہ پانچ وکٹیں حاصل کی ہیں۔

نیوزی لینڈ کی دوسری اننگز صرف ایک گیند تک محدود رہی اور بارش کی وجہ سے تیسرے دن کا کھیل ختم کر دینا پڑا۔