کولمبیا: ہوائی حادثے کے بعد فٹبال کی دنیا میں سوگ

کولمبیا تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کئی نامور کھلاڑیوں نے ہلاک ہونے والے کھلاڑیوں کو خراج عقیدت پیش کیا ہے

کولمبیا میں ہوائی حادثے میں برازیل کے فٹبال کلب کے کھلاڑیوں کی موت کے بعد دنیا بھر میں فٹبال شائقین سوگ منا رہے ہیں۔

حادثے کا شکار ہونے والے چارچرڈ طیارے میں برازیلی فٹبال کلب چپیکونس کے کھلاڑیوں سمیت 77 سوار تھے جن میں صرف چھ افراد زندہ بچے ہیں۔

طیارہ حادثہ: فٹبال کی دنیا سوگ وار، تصاویر

یہ ٹیم کوپا سڈامریکانا کا فائنل میچ کھیلنے جا رہی تھی جسے اس کلب کی تاریخ کا سب سے بڑا مقابلہ قرار دیا جارہا تھا۔

ان کی مخالف کولمبین ٹیم اٹلیٹکو نیسنل نے ہار تسلیم کرنے کی پیش کش کی ہے تاکہ چپیکونس کلب کو فاتح قرار دیا جا سکے۔

کلب کی جانب سے فٹبال شائقین کو میچ کے مقررہ وقت پر سٹیڈیم میں سفید لباس میں آنے کی بھی ہدایت کی گئی ہے۔

برازیل کی فرسٹ ڈویژن ٹیموں کی جانب سے ایک مشترکہ بیان میں چپیکونس کلب کو بلامعاوضہ کھلاڑی فراہم کرنے کی پیشکش بھی کی گئی ہے اور لیگ سے مطالبہ کیا ہے آئندہ تین سالوں کے لیے کلب کو ختم ہونے سے بچایا جائے۔

بارسلونا کلب کے لیونل میسی اور نیمار، مانچسٹریونائیٹڈ کلب کے وائن رونی سمیت کئی نامور کھلاڑیوں نے ہلاک ہونے والے کھلاڑیوں کو خراج عقیدت پیش کیا ہے۔

کولمبیا کے ہوابازی کے محکمے کا کہنا ہے کہ طیارے میں 21 صحافی بھی سوار تھے اور دونوں فلائٹ ریکارڈرز مل گئے ہیں۔

پیر کو پرواز کے دوران طیارے کا میڈیلن شہر کے قریب پائلٹ کی جانب سے فنی خرابی کا بتایا گیا تھا جس کے بعد اس کا کنٹرول ٹاورز سے مقامی وقت کے مطابق شب 11:15 بجے پر رابطہ منقطع ہوگیا تھا۔ جس کے بعد طیارہ شہر سے باہر واقع پہاڑی علاقے میں گر گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption حادثے میں بچ جانے والے چھ افراد میں سے تین فٹبال کھلاڑی ہیں

ابتدائی طور پر طیارے میں سوار افراد کی تعداد 81 بتائی گئی تھی تاہم کولمبین حکام کے مطابق ان میں سے چار افراد طیارے میں سوار نہیں ہوئے تھے۔

حادثے میں بچ جانے والے چھ افراد میں سے تین فٹبال کھلاڑی ہیں۔ جن میں ایلن روشل ، ہلیو زیمپر اور گول کیپر جیکسن فولمین شامل ہیں۔

ڈنیلو کے نام سے جانے پہچانے جانے والے فٹبال کھلاڑی گول کیپر مارکوس پڈلہا کو بھی ملبے سے زندہ نکالا گیا تھا تاہم وہ ہسپتال میں چل بسے۔

طیارے میں سوار 21 صحافیوں میں سے چھ فاکس سپورٹس برازیل اور دیگر گلوبو میڈیا کے لیے کام کرتے تھے۔

تین برطانوی تفتیش کار بھی حادثے کی تحقیقات میں مدد کے لیے کولمبیا جارہے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں