دھونی ون ڈے اور ٹی 20 کی کپتانی سے بھی مستعفی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption دھونی نے نہ صرف 199 ایک روزہ میچوں بلکہ 72 ٹی ٹوئنٹی میچوں میں بھی کپتانی کے فرائض سرانجام دیے

انڈین کرکٹ بورڈ کے ایک اعلان کے مطابق مہندر سنگھ دھونی نے محدود اووروں کے میچوں میں انڈین ٹیم کی کپتانی سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

بدھ کو اس بات کا اعلان کرتے ہوئے بورڈ کا کہنا تھا کہ دھونی کے استعفے کا مطلب یہ ہے کہ وہ اس ماہ انگلینڈ کے خلاف ایک روزہ اور ٹی ٹؤنٹی میچوں میں انڈین ٹیم کی کپتانی نہیں کریں گے۔

میں ہوں دھونی کا دیوانہ

آئی سی سی بی کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ ’مہندر سنگھ دھونی نے بورڈ کو بتایا ہے کہ وہ ایک روزہ اور ٹی ٹوئٹی میچوں میں انڈین کرکٹ ٹیم کی کپتانی سے استعفیٰ دینا چاہتے ہیں۔‘

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ دھونی ٹیسٹ ٹیم کی کپتانی سے پہلے ہی مستعفی ہو چکے ہیں تاہم وہ انگلینڈ کے خلاف جاری سیریز میں بطور کھلاڑی ٹیم میں شمولیت کے لیے دستیاب رہیں گے۔

دھونی نے محدود اووروں کی کرکٹ میں ایک طویل عرصے سے تک انڈین ٹیم کی کپتانی کی اور اس دوران انھوں نے نہ صرف 199 ایک روزہ میچوں اور 72 ٹی ٹوئنٹی میچوں میں کپتانی کے فرائض سرانجام دیے بلکہ سنہ 2011 میں اس ٹیم کی کپتانی بھی کی جس نے انڈیا کے لیے دوسرا عالمی کپ جیتا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption مہندر سنگھ دھونی کا شمار انڈیا کے کامیاب ترین کرکٹ کپتانوں میں ہوتا ہے

اس کے علاوہ مہندر سنگھ دھونی کی قیادت میں انڈین ٹیم سنہ 2015 کے عالمی کپ کے مقابلوں میں سیمی فائنل میں پہنچی تھی جہاں اسے ویسٹ انڈیز کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

کرکٹ کی دنیا میں شاندار کارکردگی کے حوالے سے مہندر سنگھ دھونی کا شمار انڈیا کے مقبول ترین کھلاڑیوں میں ہوتا ہے۔ گذشتہ سال ان کی زندگی پر ایک فلم بھی بنی تھی جس کا نام 'ایم ایس دھونی- دی انٹولڈ سٹوری' تھا، یعنی دھونی کی زندگی کی وہ کہانی جو آپ نے پہلے نہیں سنی تھی۔