’شاہ زیب خود اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ہمیں یقین تھا کہ شاہ زیب حسن نے کوئی غلط کام نہیں کیا

پاکستان سپر لیگ میں حصہ لینے والی ٹیم کراچی کنگز کے سربراہ سلمان اقبال کا کہنا ہے کہ شاہ زیب حسن خود اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے تھے اور اسے مشکوک افراد کی جانب سے ان سے کئے گئے رابطے کے بارے میں تمام تر تفصیلات سے مطلع کیا تھا۔

سلمان اقبال نے بی بی سی اردو کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ کراچی کنگز کی پوری مینجمینٹ شاہ زیب کے ساتھ تھی کیونکہ ہمیں یقین تھا کہ شاہ زیب حسن نے کوئی غلط کام نہیں کیا اسی لیے کپتان سنگاکارا اور کوچ مکی آرتھر نے بھی ان کی ہمت بڑھائی۔

* ’بک میکرز سے رابطہ‘: شرجیل خان اور خالد لطیف معطل

سلمان اقبال نے اس بات پر افسوس ظاہر کیا کہ ذرائع ابلاغ نے انتہائی غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے عماد وسیم کا نام بھی اس معاملے میں اچھالا حالانکہ ان کا اس معاملے میں دور دور تک کوئی تعلق نہیں تھا۔

سلمان اقبال نے کہا کہ پاکستان سپر لیگ میں حصہ لینے والی تمام فرنچائزز کے مالکان ایک ہیں لیکن میڈیا بٹا ہوا ہے۔

’میڈیا کو اس بارے میں ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہیے کہ کسی بھی کھلاڑی کے بارے میں بے سروپا خبر نہ دی جائے کیونکہ یہ اس کے کریئر کا معاملہ ہوتا ہے اس کے علاوہ اس طرح کی خبریں دینے سے قبل یہ بھی سوچنا چاہیے کہ اس سے پاکستان سپر لیگ کو ہی نقصان پہنچ سکتا ہے۔‘

سلمان اقبال نے کہا کہ تمام فرنچائزز گذشتہ سال ہی یہ طے کرچکے تھے کہ اس لیگ کو منفی عناصر سے محفوظ رکھیں گے لیکن یہ افسوس ناک واقعہ پیش آگیا تاہم جو ہونا تھا وہ ہوگیا اب ہمیں کھیل کی طرف توجہ مرکوز رکھنی ہوگی۔

اسی بارے میں