کانٹے کے مقابلے کے بعد لاہور قلندرز نے ایک بار پھر اسلام آباد یونائیٹڈ کو شکست دے دی

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ PSL
Image caption گرانٹ ایلیٹ کے چھکے کی مدد سے لاہور قلندرز نے دفاعی چیمپئین اسلام آباد یونائیٹڈ کو ایک وکٹ سے ہرا دیا

متحدہ عرب امارات میں جاری پاکستان سپر لیگ کے دوسرے سیزن میں پیر کو کھیلے جانے والے واحد میچ میں لاہور قلندرز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو ایک وکٹ سے شکست دے دی۔

میچ کے آخری اوور میں قلندرز کو چھ رنز درکار تھے اور ان کی دو وکٹیں باقی تھیں۔ محمد سمیع کی پہلی گیند پر عامر یامین آؤٹ ہو گئے لیکن اگلی گیند پر گرانٹ ایلیٹ نے محمد سمیع کو ایک بلند و بالا چھکا لگا کر قلندرز کو فتح سے ہمکنار کرا دیا۔

نیوزی لینڈ سے تعلق رکھنے والے ایلیٹ نے 2015 میں کرکٹ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں بھی اسی طرح آخری اوور میں چھکا لگا کر جنوبی افریقہ کے خلاف فتح مکمل کی تھی۔

’پاکستان سپر لیگ کا فائنل لاہور میں ہی ہو گا‘

کانٹے کا مقابلہ، اسلام آباد کی آخری گیند پر فتح

لیکن قلندرز کی جانب سے اصل ہیرو اور مین آف دی میچ عمر اکمل تھے جنھوں نے اپنی ٹیم کے سست آغاز کے باوجود ایلیٹ کے ساتھ پانچ اوورز میں 41 رنز کی شراکت جوڑی۔

سنیل نارائن نے بھی عمر اکمل کے آؤٹ ہونے کے بعد پانچ گیندوں پر 12 رنز بنائے جو کہ بہت اہم ثابت ہوئے۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کی جانب سے رمان ریئس نے تین اور شاداب خان نے دو وکٹیں حاصل کی۔

اس سے پہلے اسلام آباد یونائیٹڈ نے اننگز کے اختتام تک آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 145 رنز بنائے تھے۔

ساتویں وکٹ کی شراکت میں شاداب خان اور عماد بٹ نے قیمتی 53 رنز بنا کر اپنی ٹیم کو ایک مناسب سکور تک پہنچانے میں مدد دی۔

عماد بٹ آخری اوور میں 17 رنز بنا کر آؤٹ ہونے والے ساتویں کھلاڑی تھے۔ 18 سالہ شاداب خان نے عمدہ بیٹنگ کی اور 42 رنز بنا کر آخری بال پر رن آؤٹ ہوگئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PSL
Image caption اسلام آباد یونائیٹڈ کے 18 سالہ شاداب خان نے 42 رنز بنا کر اپنی ٹیم کو ایک قابل قبول سکور تک پہنچانے میں مدد دی

اسلام آباد یونایئٹڈ کے ٹاپ آرڈر کو اپنے پہلا میچ کھیلنے والے عامر یامین نے سکور کرنے نہیں دیا اور چار اوورز میں سترہ رنز دے کر تین وکٹیں حاصل کیں۔

یاسر شاہ نے بھی دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

یاسر شاہ نے اپنے پہلے اوور کی پہلی گیند پر ڈیوائن سمتھ کے ہاتھوں چھکا کھایا لیکن اگلی گیند پر ان کو ایل بی ڈبلیو کر کے حساب برابر کر دیا۔ سمتھ بد قسمت رہے کیونکہ گیند ان کے بلے سے ٹکرا کر پیڈ پر لگی تھی۔

یونایئٹڈ کی جانب سے سیم بلنگز کی جگہ بین ڈکٹ کو ٹیم میں شامل کیا گیا تھا جبکہ قلندرز کی طرف سے گرانٹ ایلیٹ اور عامر یامین آج ٹیم کا حصہ بنے اور دونوں نے فتح میں اہم کردار ادا کیا۔

یہ اس سیزن میں دوسرا موقع ہے کہ لاہور قلندرز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو شکست دی۔

گذشتہ میچ میں لاہور قلندرز نے چھ وکٹوں سے کامیابی حاصل کی تھی اور اس جیت میں ان کے غیر ملکی کھلاڑی جیسن رائے نے نصف سنچری بنا کر اہم کردار ادا کیا تھا۔

اس میچ کے نتیجہ کے بعد اب لاہور قلندرز چھ پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے جبکہ اسلام آباد کم رن ریٹ ہونے کے باعث تیسرے درجے پر چلی گئی ہے۔

آج کے میچ کے بعد ٹورنامنٹ میں دو دن کا وقفہ ہوگا جس کے بعد جمعرات 23 فروری سے دبئی کے کرکٹ سٹیڈیم میں پی ایس ایل کا مقابلہ دوبارہ شروع ہو گا جہاں کراچی کنگز کا مقابلہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے خلاف ہوگا۔

یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے پیر کو ہی ایک اہم اجلاس میں یہ فیصلہ کیا ہے کہ لیگ کے دوسرے سیزن کا فائنل حسب ارادہ پانچ مارچ کو لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں ہی کھیلا جائے گا اور اس فیصلہ کو تمام فرینچائزوں کی حمایت حاصل ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں