پی ایس ایل: لاہور قلندرز آخری اوور میں ہدف عبور نہ کر سکے، زلمی کے ہاتھوں 17 رنز سے شکست

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ PSL
Image caption پشاور زلمی لاہور قلندرز کے خلاف 17 رنز سے جیت

متحدہ عرب امارات کے دبئی کرکٹ سٹیڈیم میں جاری پی ایس ایل سیزن ٹو میں دن کے پہلے میچ میں پشاور زلمی نے لاہور قلندرز 17 رنز سے ہرا کر اپنی پوزیشن بہتر کر لی ہے۔

لاہور قلندرز اننگز کے اختتام تک نو وکٹوں کے نقصان پر 149 رنز بنا سکے اور میچ 17 رنز سے ہار گئے۔

اس میچ کے بعد پشاور زلمی کی ٹیم اب سات میچوں کے بعد سات پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے جبکہ لاہور قلندرز کی ٹیم چوتھی پوزیشن پر واپس چلی گئی ہے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم چھ میچوں میں نو پوائنٹس کے ساتھ ابھی بھی سر فہرست ہیں جبکہ کراچی کنگز صرف چار پوائنٹس کے ساتھ آخری نمبر پر ہیں۔

یاسر شاہ اور سہیل تنویر نے سات اوورز میں پچاس رنز کی شراکت قائم کی تو لگ رہا تھا کے آخری اوو میں کچھ بھی ہو سکتا ہے لیکن شاہد آفریدی نے بیسویں اوور میں یاسر شاہ کی وکٹ حاصل کر کے قلندرز کے خواب چکنا چور کر دیے۔

عامر یامین کی مزاحمت بھی زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی نے 25 رنز پر ختم کر دی۔

ساتویں وکٹ کی پارٹنرشپ میں سنیل نارائن اور عامر یامین نے 45 رنز جوڑے لیکن وہاب ریاض کی گیند پر نارائن کیچ آؤٹ ہو گئے۔ انھوں نے 21 رنز بنائے تھے۔

محمد حفیظ نے محمد رضوان کو بھی ایل بی ڈبلیو آؤٹ کر کے لاہور قلندرز کو ایک اور دھچکہ دیا جو صرف چار رنز بنا سکے۔

شکیب الحسن نے اگلے اوور میں پچھلے میچ کے ہیروز عمر اکمل اور گرانٹ ایلیٹ کو آؤٹ کر کے لاہور قلندرز کو شدید مشکلات سے دوچار کر دیا۔

محمد حفیظ نے اپنے اوور میں ان فارم بلے باز فخر زمان کو صفر پر کیچ آؤٹ کروایا اور اس کے بعد کپتان برینڈن میککلم بھی چھ رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔

حسن علی نے اپنے اگلے اوور میں ڈلپورٹ کی قیمتی وکٹ حاصل کی جو 32 رنز بنا کے آؤٹ ہو گئے۔

محمد اصغر کی جانب سے کیے گئے دوسرے اوور میں کیمرون ڈلپورٹ نے پانچ چوکے لگائے۔

اس سے پہلے پشاور زلمی نے بیس اوورز میں 166 رنز چھ کھلاڑی آؤٹ پر اپنی اننگز ختم کی۔

اننگز کے آخری اوور میں شکیب الحسن کے آؤٹ ہونے کے بعد کپتان ڈیرن سیمی نے سہیل تنویر کی بولنگ پر ایک چھکے اور ایک چوکے کی مدد سے سولہ رنز بنائے۔

انیسویں اوور میں شاہد آفریدی تیز رن لینے کی کوشش میں رن آؤٹ ہو گئے۔ انھوں نے ایک چوکے کی مدد سے 10 رنز بنائے۔

چوتھی وکٹ کے لیے 38 رنز کی شراکت کو سنیل نارئن نے ختم کیا اور مارلن سمیؤلیز کی وکٹ حاصل کی جو 17 رنز بنا سکے۔

کامران اکمل نے ٹورنامنٹ میں اپنی دوسری نصف سنچری مکمل کر لی لیکن اگلے اوور میں 58 رنز پر یاسر شاہ نے ان کی وکٹ حاصل کر لی۔

کامران اکمل کے ساتھ دوسری وکٹ کی شراکت میں 53 رنز بنا کر محمد حفیظ یاسر شاہ کے پہلے اوور میں آؤٹ ہو گئے۔

عامر یامین نے دوسرے اوور کرایا اور پہلی گیند پر ہی تمیم اقبال کو 5 رنز پر کیچ آؤٹ کر لیا۔

پشاور زلمی کی جانب سے تمیم اقبال اور کامران اکمل نے اوپننگ کی جب کہ لاہور قلندرز کی طرف سے سہیل تنویر نے پہلا اوور کرایا۔

پی ایس ایل سیزن ٹو میں یہ پہلا موقع ہے کہ کسی ٹیم نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا ہے۔

ٹورنامنٹ میں ان دونوں ٹیموں کے درمیان یہ دوسرا مقابلہ ہے۔ پہلے میچ میں پشاور زلمی نے لاہور کو ایک انتہائی سنسنی خیز مقابلہ کے بعد تین وکٹوں سے ہرا دیا تھا۔

زبردست مقابلے کے بعد لاہور قلندرز کی جیت

'اب تو فائنل لاہور ہی میں ہو گا'

اس میچ میں لاہور قلندرز کی ٹیم نے پی ایس ایل کی تاریخ کا سب سے کم سکور 59 رنز کیا تھا لیکن جواب میں انھوں نے تگڑا مقابلہ کیا اور پشاور زلمی کی سات وکٹیں حاصل کر لی تھیں۔

آج کے دن کا دوسرا میچ دفاعی چیمپئن اسلام آباد یونائیٹڈ اور کوئٹی گلیڈی ایٹرز کے درمیان پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات نو بجے شروع ہوگا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں