سنسنی خیز مقابلے کے بعد کوئٹہ گلیڈی ایٹرز فائنل میں

پی ایس ایل تصویر کے کاپی رائٹ PSL

شارجہ میں کھیلے جانے والے پاکستان سپر لیگ کے پہلے پلے آف میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے سنسی خیز مقابلے کے بعد پشاور زلمی کو ایک رن سے شکست دے کر فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

آخری اوور میں پشاور زلمی کو سات رنز درکار تھے تاہم وہ صرف پانچ رنز ہی بنا سکی۔

پشاور زلمی کی جانب سے محمد حفیظ اور ڈیوڈ ملان نے جارحانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے تیسری وکٹ کی شراکت میں 139 رنز بنائے۔ دونوں نے اسی دوران اپنی نصف سنچریاں بھی مکمل کیں۔

دونوں نے جارحانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے ساتویں اوور میں 19 رنز بنائے۔

’کاش ہم پر کیمرہ مہربان ہو جائے‘

غیرملکی کمنٹیٹرز لاہور نہیں جائیں گے

'اب تو فائنل لاہور ہی میں ہو گا'

تصویر کے کاپی رائٹ PSL

144 رنز کے مجموعی سکور پر پشاور زلمی کی تیسری وکٹ اس وقت گری جب محمد حفیظ 77 رنز بنا کر محمد نواز کی گیند پر سعد نسیم کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

پشاور زلمی کی جانب سے کامران اکمل اور ڈیوڈ ملان نے اننگز کا آغاز کیا اور پہلی وکٹ کی شراکت میں ایک رن بنایا۔

پشاور زلمی ابھی پہلی وکٹ کے نقصان سے سنھبلنے نہ پائی تھی کہ تین رنز کے مجموعی سکور پر اس کی دوسری وکٹ گر گئی۔

پشاور زلمی کے آؤٹ ہونے والے دوسرے بلے باز مارلن سیموئیل تھے، وہ ایک سکور بنا کر رن آؤٹ ہوئے۔

پشاور زلمی کے آؤٹ ہونے والے پہلے بلے باز کامران اکمل تھے، وہ صرف ایک سکور بنا کر ذوالفقار بابر کی گیند پر کیون پیٹرسن کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی اننگز

اس سے پہلے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے مقررہ 20 اوور میں سات وکٹوں کے نقصان پر 200 رنز بنائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PSL

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے احمد شہزاد نے 71 اور پیٹرسن نے 40 رنز بنائے۔

پشاور زلمی کی جانب سے وہاب ریاض نے تین، حسن علی اور ڈیرن سیمی نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

پشاور زلمی کے بولر شاہد آفریدی نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے میچ کے 14 ویں اوور میں صرف دو رنز دیے۔ 13 اوور میں بھی کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم صرف چھ رنز بنا سکی تھی۔

132 رنز کے مجموعی سکور پر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی تیسری وکٹ اس وقت گری جب کیون پیٹرسن 40 رنز بنا کر وہاب ریاض کی گیند پر محمد اصغر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PSL

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے آؤٹ ہونے والے دوسرے بلے باز احمد شہزاد تھے، وہ 71 رنز بنا کر ڈیرن سیمی کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے احمد شہزار اور کیون پیٹرسن نے جارحانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے آٹھویں اوور میں 19، ساتویں اوور میں 16 اور چھٹے اوور میں 15 رنز بنائے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے آؤٹ ہونے والے پہلے بلے باز لیوک رائٹ تھے، وہ 12 رنز بنا کر حسن علی کی گیند پر بولڈ ہوئے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے احمد شہزاد اور لیوک رائٹ نے اننگز کا آغاز کیا۔

یہ پہلا موقع ہے کہ کسی بھی ٹی ٹوئنٹی میچ میں ڈی آر ایس کا استعمال کیا جا رہا ہے۔

پشاور زلمی نے میچ کے پانچویں اوور میں فیلڈ امپائر کے فیصلے کے خلاف ریویو لیا تاہم تھرڈ امپائر نے فیلڈ امپائر کا فیصلہ برقرار رکھا۔

پشاور زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی کا ٹاس جیتنے کے بعد کہنا تھا کہ ہم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو کم سے کم سکور پر آؤٹ کرنے کی کوشش کریں گے۔

یہ میچ جیتنے والی ٹیم فائنل میں پہنچ جائے گی جبکہ ہارنے والی ٹیم کے پاس فائنل تک رسائی کا ایک اور موقع موجود ہوگا اور وہ دوسرے پلے آف کی فاتح ٹیم سے تیسرے پلے آف میں مقابلہ کرے گی۔

واضح رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے پہلے سیزن میں بھی انھی ٹیموں نے پہلا پلے آف میچ کھیلا تھا جس میں کوئٹہ کی ٹیم فاتح رہی تھی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں