پاکستان کی بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کو دورے کی دعوت

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کرکٹ بورڈ نے ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کی اپنی کوششوں کے سلسلے میں بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ سے درخواست کی ہے کہ وہ رواں سال نومبر میں اپنی کرکٹ ٹیم پاکستان بھیجے۔

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ نے پی سی بی کی اس درخواست کے جواب میں اپنا سکیورٹی وفد پاکستان بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ سکیورٹی وفد پاکستان سپر لیگ کے فائنل کے موقع پر لاہور جائے گا اور وہاں سکیورٹی کے انتظامات دیکھنے کے بعد اپنی رپورٹ بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کو دے گا۔

بی بی سی کو معلوم ہوا ہے کہ پی سی بی نے بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ سے یہ درخواست اپنے پلان بی کے تحت کی ہے۔

٭’پی ایس ایل فائنل لاہور میں کرانا پاگل پن ہے‘

٭’لاہور میں فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے گی‘

نامہ نگار عبدالرشید شکور کے مطابق اصل پروگرام کے تحت اس سال نومبر، دسمبر میں انڈیا کو پاکستان سے سیریز کھیلنی ہے لیکن یہ بات پاکستان کرکٹ بورڈ کو بھی معلوم ہے کہ انڈیا مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کرنے کے باوجود پاکستان کے ساتھ کھیلنے سے انکار کرتا آیا ہے، لہذا پلان بی کے تحت پاکستان کرکٹ بورڈ نومبر میں بنگلہ دیشی ٹیم کے دورۂ پاکستان کا خواہش مند ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم 2012 اور 2015 میں بنگلہ دیش کے دورے کرچکی ہے لیکن بنگلہ دیشی ٹیم 2008 کے بعد سے پاکستان نہیں آئی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں