’چیرمین نے کہا پرفارمنس دیتے رہو ضرور موقع ملے گا‘

تصویر کے کاپی رائٹ PSL
Image caption کامران اکمل نے پشاور زلمی کی طرف سے کھیلتے ہوئے کراچی کنگز کے خلاف شاندار سنچری سکور کی

وکٹ کیپر بیٹسمین کامران اکمل نے موجودہ سیزن میں اپنی شاندار بیٹنگ کے سبب پاکستانی کرکٹ ٹیم میں واپسی کی امیدیں لگارکھی ہیں۔ ان امیدوں کو پاکستان سپر لیگ کے تیسرے پلے آف میں پشاور زلمی کی طرف سے کھیلتے ہوئے کراچی کنگز کے خلاف شاندار سنچری سے مزید تقویت پہنچی ہے۔

کامران اکمل نے بی بی سی اردو کے اس سوال پر کہ کیا آپ نے کبھی کرکٹ بورڈ یا سلیکشن کمیٹی سے یہ جاننے کی کوشش کی کہ فارم اور فٹنس کے باوجود آپ کو کیوں ٹیم میں شامل نہیں کیا جارہا جس پر کامران اکمل کا جواب تھا کہ وہ اس بارے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیرمین شہریارخان سے بھی مل چکے ہیں۔

’میں نے سیزن شروع ہونے سے قبل چیرمین صاحب سے ملاقات کی تھی جس میں انھوں نے کہا تھا کہ میں پرفارمنس دیتا رہوں مجھے ضرور موقع ملے گا ۔میں چیف سلیکٹر سے بھی کراچی میں چار روزہ میچ کے دوران ملا تھا۔ اس سیزن میں میری کارکردگی سب کے سامنے ہے۔‘

کامران اکمل کا کہنا ہے کہ انہیں یقین ہے کہ پاکستانی ٹیم میں ان کی واپسی ہوگی۔

’میں پچھلے دو تین سال سے ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کررہا ہوں اور اب یہ سلیکٹرز پر منحصر ہے کہ وہ مجھے ٹیم میں منتخب کرتے ہیں یا نہیں اس کا جواب تو وہی دے سکتے ہیں۔‘

عام طور پر کھلاڑی ٹیم سے ڈراپ ہونے کے بعد مایوس اور دلبرداشتہ ہوجاتے ہیں لیکن آپ نے ہمت نہیں ہاری ہے اس کی وجہ؟ کامران اکمل نے اس سوال کا ازراہ تفنن جواب دیتے ہوئے کہا۔

تصویر کے کاپی رائٹ PSL
Image caption کامران اکمل نے پاکستانی ٹیم میں بحیثیت بیٹسمین کھیلنے کی خواہش بھی ظاہر کررکھی ہے

’آپ کو کیا پتہ کہ میں دلبرداشتہ نہیں ہوا۔ دلبرداشتہ تو تھا لیکن ساتھ میں حوصلہ بھی نہیں ہارا اور میری فیملی نے میرا بہت ساتھ دیا۔میرے لیے ٹیم میں واپسی کا ایک ہی راستہ رہا ہے کہ ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی دکھاؤں اور وہ میں دکھا رہا ہوں۔‘

کامران اکمل نے پاکستانی ٹیم میں بحیثیت بیٹسمین کھیلنے کی خواہش بھی ظاہر کررکھی ہے اور جس پوزیشن پر وہ کھیلنا چاہتے ہیں اس بارے میں ان کی سوچ بالکل واضح ہے۔

’سب دیکھ رہے ہیں کہ میں ٹی ٹوئنٹی میں کس نمبر پر بیٹنگ کررہا ہوں۔ ڈومیسٹک کرکٹ ون ڈے میں کس نمبر پر کھیل رہا ہوں۔ مجھے صرف یہ معلوم ہے کہ مجھے پرفارم کرنا ہے۔ کس نمبر پر مجھے کھلایا جاسکتا ہے اس کا فیصلہ سلیکٹرز کریں گے۔‘

کامران اکمل کو خوشی ہے کہ انھوں نے سنچری اسکور کی اور ان کی ٹیم میچ جیت کر فائنل میں پہنچی ہے جو اب ان کے اپنے شہر لاہور میں اپنے شائقین کے سامنے ہوگا جس کے لیے وہ بہت زیادہ پر جوش ہیں۔

اسی بارے میں