پہلے اوکیف اور اب لیون، بنگلور ٹیسٹ میں انڈیا 189 رنز پر ڈھیر

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

بنگلور میں انڈیا اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن ایک بار پھر مہمان ٹیم کے سپنرز نے انڈین بلے بازوں کو مشکل میں ڈالے رکھا اور انھیں کریز پر جمنے نہیں دیا۔

سنیچر کو دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن کے کھیل کا جب اختتام ہوا تو انڈیا کی پوری ٹیم پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کرنے کے بعد اپنی پہلی اننگز میں 189 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی جبکہ آسٹریلیا نے اپنی پہلی اننگز میں بنا کسی وکٹ کے نقصان پر 40 رنز بنا لیے تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

انڈین کپتان وراٹ کوہلی نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو اوپنر لوکیش راہُل کے علاوہ کوئی بھی بلے باز کریز پر جم کر نہ کھیل سکا اور وقفے وقفے سے وکٹیں گرتی رہیں۔

آسٹریلیا کی جانب سے ایک بار پھر سپنرز نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کیا اور سپن بولنگ کو بہتر انداز میں کھیلنے کے لیے مشہور انڈین بلے باز اپنے ہی میدان پر انھیں کھیلنے میں ناکام دکھائی دیے۔

نیتھن لیون نے عمدہ بولنگ کی اور صرف 50 رنز عوض آٹھ وکٹیں حاصل کیں۔ ان کے علاوہ سٹیو اوکیف اور مچل سٹارک نے ایک، ایک وکٹ کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

انڈیا کی جانب سے لوکیش راہل نے 90، پجارا نے 17 جبکہ کپتان وراٹ کوہلی جن سے پہلے میچ کے بعد ایک بہتر کارکردگی کی امید کی جا رہی تھی نے صرف 12 رنز بنائے اور لیون کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

جواب میں آسٹریلیا کی جانب سے ڈیوڈ وارنر اور نوجوان بلے باز میٹ رینشو نے محتاط انداز میں اننگز کا آغاز کیا اور پہلے دن کے کھیل کے اختتام تک کریز پر جمے رہے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل کھیلے جانے والے سیریز کے ابتدائی ٹیسٹ میچ میں بھی آسٹریلوی سپنرز نے عمدہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے انڈین بلے بازوں کی ایک نہ چلنے دی تھی۔

آسٹریلیا نے یہ میچ 333 رنز سے باآسانی جیت لیا تھا۔ اس میچ میں آسٹریلیا کی جانب سے سٹیو او کیف نے کل 12 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں