محمد عرفان اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption محمد عرفان پاکستان سپر لیگ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم میں شامل تھے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے فاسٹ بولر محمد عرفان پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے ہیں۔

انھیں پاکستان سپر لیگ کے دوران سامنے آنے والے کرپشن سکینڈل کی تحقیقات کے سلسلے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہونے کے لیے کہا گیا تھا۔

محمد عرفان پاکستان سپر لیگ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم میں شامل تھے۔

تحقیقات کے سلسلے میں کراچی کنگز کے اوپنر شاہ زیب حسن منگل کے روز اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہونگے۔

یاد رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے دوران کرکٹرز کے مبینہ طور پر مشکوک افراد سے روابط کی اطلاعات سامنے آئی تھیں جس کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے دو کرکٹرز شرجیل خان اور خالد لطیف کو معطل کردیا تھا اور یہ دعوی کیا تھا کہ اس کے پاس ان دونوں کرکٹرز کے خلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پاکستان سپر لیگ کے دوران فاسٹ بولر محمد عرفان، اوپنر شاہ زیب حسن اور لیفٹ آرم سپنر ذوالفقار بابر سے بھی پوچھ گچھ کی تھی لیکن انھیں کھیلنے سے نہیں روکا گیا تھا۔

محمد عرفان اور شاہ زیب حسن کے بارے میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے یہ کہا تھا کہ یہ دونوں کلیئر کر دیے گئے ہیں لیکن بعد میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہریارخان کا کہنا تھا کہ محمد عرفان کے خلاف تحقیقات جاری ہیں اور انھیں بھی شوکاز نوٹس جاری کیا جا سکتا ہے۔

اسی بارے میں