مشکوک افراد سے مبینہ روابط، فاسٹ بولر محمد عرفان معطل

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption محمد عرفان نے پاکستان سپر لیگ میں اسلام آباد یونائٹڈ کی نمائندگی کی تھی

پاکستان کرکٹ بورڈ نے فاسٹ بولر محمد عرفان کو معطل کردیا ہے اور انھیں 14 روز میں اپنا جواب داخل کرنے کے لیے کہا گیا ہے۔

یہ معطلی پاکستان سپر لیگ کرپشن سکینڈل کے سلسلے میں عمل میں آئی ہے۔

محمد عرفان اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش

جرم ثابت ہوا تو کڑی سے کڑی سزا دیں گے: شہریار خان

واضح رہے کہ محمد عرفان پیر کے روز پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے تھے اور اپنا بیان ریکارڈ کرایا تھا۔

نامہ نگار عبدالرشید شکور کے مطابق محمد عرفان پر الزام ہے کہ انہوں نے مشکوک افراد سے اپنے مبینہ روابط کے بارے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ کو مطلع نہیں کیا تھا۔

محمد عرفان نے پاکستان سپر لیگ میں اسلام آباد یونائٹڈ کی نمائندگی کی تھی۔

اسی تحقیقات کے سلسلے میں کراچی کنگز کے اوپننگ بیٹسمین شاہ زیب حسن منگل کے روز پاکستان کرکٹ بورڈ کے انٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوں گے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ دو کرکٹرز شرجیل خان اور خالد لطیف کو پہلے ہی معطل کرچکا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے اس کرپشن سکینڈل کی تحقیقات کے لیے تین رکنی ٹریبونل بھی تشکیل دیا ہے جس کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ اصغر حیدر ہیں اور اس میں لیفٹننٹ جنرل ریٹائرڈ توقیر ضیا اور وسیم باری شامل ہیں۔

یہ ٹریبونل جلد ہی اپنا کام شروع کرنے والا ہے۔

اسی بارے میں