پی ایس ایل سکینڈل ، شاہ زیب حسن بھی معطل

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شاہ زیب سے پہلے شرجیل خان، خالد لطیف، ناصر جمشید اور محمد عرفان معطل کیے جاچکے ہیں

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پاکستان سپر لیگ سکینڈل کے سلسلے میں کراچی کنگز کے اوپننگ بیٹسمین شاہ زیب حسن کو معطل کرتے ہوئے اظہار وجوہ کا نوٹس جاری کردیا ہے۔

وہ اس اسکینڈل میں معطل کیے جانے والے پانچویں کرکٹر ہیں۔

اس سے قبل شرجیل خان، خالد لطیف، ناصر جمشید اور محمد عرفان معطل کیے جاچکے ہیں۔

’شاہ زیب خود اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے‘

نامہ نگار عبد الرشید شکور کے مطابق شاہ زیب حسن جمعے کو تیسری مرتبہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے جس کے بعد انہیں اظہاروجوہ کا نوٹس دے دیا گیا جس کے تحت وہ چودہ روز کے اندر جواب دینے کے پابند ہیں۔

یاد رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے آغاز پر ہی کرپشن اسکینڈل سامنے آنے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے فوری طور پر دو کرکٹرز شرجیل خان اور خالد لطیف کو معطل کردیا تھا۔ اس دوران انٹی کرپشن یونٹ نے محمد عرفان ذوالفقار بابر اور شاہ زیب حسن سے بھی پوچھ گچھ کی تھی اور اس وقت پاکستان کرکٹ بورڈ نے ان تینوں کرکٹرز کو کلیئر قرار دیتے ہوئے سپر لیگ میں کھیلنے کی اجازت دے دی تھی۔

اسی اثنا میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے سابق اوپنر ناصر جمشید کو بھی معطل کردیا تھا جن کے بارے میں اس کا دعوی ہے کہ اس پورے اسکینڈل میں وہ مرکزی کردار ہے۔

پاکستان سپر لیگ کے اختتام پر انٹی کرپشن یونٹ کی تحقیقات کی روشنی میں محمد عرفان اور اب شاہ زیب حسن کی معطلی یہ ظاہر کرتی ہے کہ تحقیقات ابھی مکمل نہیں ہوئی ہیں اور مستقبل قریب میں مزید کرکٹرز کے نام بھی اس اسکینڈل میں سامنے آسکتے ہیں۔

اسی بارے میں