سپاٹ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں پر تاحیات پابندی عائد ہونی چاہیے: محمد حفیظ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption محمد حفیظ کا کہنا تھا جیسے میں نے کسی کی جگہ لی تھی اسی طرح میری بھی کسی نے جگہ لینی ہے

پاکستانی کرٹ ٹیم کے سابق کپتان اور آل راؤنڈر محمد حفیظ کا کہنا ہے کہ سپاٹ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں پر تا حیات پابندی عائد کر دینی چاہے۔

لاہور میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا سپاٹ فکسنگ کا حصہ بننا غلطی نہیں جرم ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے ایک ایسی مثال قائم کرنے کی ضرورت ہے جس سے دوسرے کھلاڑیوں کو سبق حاصل ہو۔

واضح رہے ان کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب پاکستان کرکٹ بورڈ اور اینٹی کرپشن یونٹ کی جانب سے پاکستان سپر لیگ سکینڈل میں کرپشن کے حوالے سے تحقیقات کے بعد اب تک پانچ پاکستانی کرکٹرز کو معطل کر دیا گیا ہے۔

اب تک معطل کیے جانے والے کھلاڑیوں میں شرجیل خان، خالد لطیف، محمد عرفان، ذوالفقار بابر اور شاہ زیب حسن شامل ہیں۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان محمد حفیظ نے کہا کہ وہ اپنے کیرئر کا اختتام عزت کے ساتھ کریں گے۔

انھوں نے کہا ’اگر مجھے لگا کہ میں عزت کے ساتھ نہیں کھیل پا رہا یا وہ پرفارمنس نہیں دے پا رہا جو مجھے پاکستان کے لیے دینی چاہیے تو میں وعدہ کرتا ہوں کہ عزت کے ساتھ جاؤں گا۔‘

میری کوشش ہو گی کہ اپنی پر فارمنس اور فٹنس سے اچھے نتائج حاصل کر سکوں تو کرکٹ کھیلوں ورنہ پاکستان کا نام آگے لے جانے کے لیے ضروی ہے کہ جیسے میں نے کسی کی جگہ لی تھی اسی طرح میری بھی کسی نے جگہ لینی ہے۔ ہم سب کو بڑے دل سے کرکٹ میں نئے آنے والوں کو خوش آمدید کہنا چاہیے۔

اسی بارے میں