میسی پر پابندی کے بعد ارجنٹائن کو بولیویا کے ہاتھوں شکست

میسی تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ارجنٹائن نے میسی پر پابندی کے خلاف اپیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے

ارجنٹائن کی فٹبال ٹیم اپنے کپتان لیونل میسی پر چار میچوں کی پابندی عائد ہونے کے چند گھنٹے بعد ایک اہم میچ میں بولیویا کے ہاتھوں دو گول سے شکست کھا گئی ہے۔

اس شکست کے نتیجے میں ارجنٹائن کی ٹیم ورلڈ کپ مقابلوں کے لیے ازخود کوالیفیکیشن سے بھی محروم ہو گئی ہے۔

جنوبی امریکہ کے ورلڈ کپ کوالیفائنگ مرحلے میں ارجنٹینا اب بولیویا سے شکست کھانے کے بعد پانچویں نمبر پر چلی گئی ہے۔

اس گروپ سے چار بہترین ٹیمیں ہی روس میں فٹبال کے عالمی کپ کے لیے کوالیفائی کریں گی جبکہ پانچویں ٹیم کو اوشیانیا گروپ کے فاتح سے پلے آف میچوں میں مقابلہ کرنا ہوگا۔

میسی پابندی کی وجہ سے کوالیفائنگ راؤنڈ میں برازیل، یوراگوائے اور وینزویلا کے خلاف میچوں میں بھی اپنے ملک کی نمائندگی نہیں کر سکیں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

لیونل میسی پر جمعرات کو ارجنٹینا اور چلی کے درمیان میچ کے دوران ایک اسسٹنٹ ریفری کو 'نازیبا کلمات' کہنے کی پاداش میں پابندی لگائی گئی، اس میچ میں ارجنٹینا نے 1-2 سے کامیابی حاصل کی تھی۔

اس میچ کا واحد گول میسی نے ہی کیا تھا اور میچ کے دوران فاؤل قرار دیے جانے پر انھوں نے اسسٹنٹ ریفری پر اپنے غصے کا اظہار ہاتھ کے اشاروں اور چلاتے ہوئے کیا تھا۔

29 سالہ سٹرائیکر پر 8100 برطانوی پاؤنڈ کا جرمانہ بھی کیا گیا ہے تاہم ارجنٹائن نے اس پابندی اور جرمانے کے خلاف اپیل کرنے کا اعلان کیا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں