مصباح اور یونس وزڈن کے پانچ بہترین کرکٹرز میں شامل

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption مصباح الحق اور یونس خان سے قبل 15 پاکستانی کھلاڑی وزڈن کے پانچ بہترین کرکٹرز میں جگہ بنا چکے ہیں

پاکستان کی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق اور تجربہ کار بلے باز یونس خان کے نام سنہ 2016 کے لیے وزڈن کے پانچ بہترین کرکٹرز میں شامل کیے گئے ہیں۔

وزڈن کی جانب سے انڈیا کے وراٹ کوہلی کو لیڈنگ کرکٹر آف دا ائیر یا سال کا سب سے نمایاں کھلاڑی قرار دیا گیا ہے جبکہ بقیہ تین کھلاڑیوں میں انگلینڈ کے بین ڈکٹ، کرس ووکس اور ٹوبی رونلڈز جونز شامل ہیں۔

'وزڈن کے پانچ کرکٹرز میں شمولیت اعزاز ہوگا'

واضح رہے کہ دنیائے کرکٹ میں معتبر مقام رکھنے والی کتاب وزڈن ہر سال انگلینڈ میں کھیلی جانے والی بین الاقوامی اور کاؤنٹی کرکٹ میں غیرمعمولی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے پانچ بہترین کرکٹرز کا انتخاب کرتی ہے۔

یہ سلسلہ 1889 میں شروع ہوا تھا اور مصباح الحق اور یونس خان سے قبل 15 پاکستانی کھلاڑی وزڈن کے پانچ بہترین کرکٹرز میں جگہ بنا چکے ہیں۔

ان میں فضل محمود، مشتاق محمد، آصف اقبال، حنیف محمد، ماجد خان، ظہیرعباس، جاوید میانداد، عمران خان، سلیم ملک، وقاریونس، وسیم اکرم، مشتاق احمد، سعید انور، ثقلین مشتاق اور محمد یوسف شامل ہیں۔

42 سالہ مصباح الحق اور 40 سالہ یونس خان کی وزڈن کرکٹرز آف دی ایئر میں شمولیت 2016 میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کی دورۂ انگلینڈ میں شاندار کارکردگی کی بنیاد پر ہوئی ہے۔

مصباح الحق کی قیادت میں پاکستانی کرکٹ ٹیم نے انگلینڈ کے خلاف چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز دو دو سے برابر کی تھی۔ اس نے لارڈز میں کھیلا گیا پہلا ٹیسٹ جیتا اور پھر اگلے دو ٹیسٹ میچز ہارنے کے بعد اوول کا آخری ٹیسٹ جیت کر سیریز برابر کی۔

مصباح الحق نے پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان کھیلے گئے لارڈز ٹیسٹ میں سنچری بنائی تھی۔

اس کارکردگی کے نتیجے میں پاکستانی کرکٹ ٹیم پہلی بار ٹیسٹ کرکٹ کی عالمی رینکنگ میں پہلی پوزیشن حاصل کرنے میں بھی کامیاب ہوئی۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ مصباح اپنے کریئر میں پہلی بار انگلینڈ میں ٹیسٹ میچ کھیل رہے تھے اور وہ 42 سال 47 دن کی عمر میں سنچری بنانے والے ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ کے سب سے عمر رسیدہ کپتان بھی بنے۔

مصباح الحق نے سیریز کے دوسرے اور تیسرے ٹیسٹ میں بھی نصف سنچریاں بنائی تھیں جبکہ یونس خان نے اس سیریز کے اوول ٹیسٹ میں ڈبل سنچری سکور کی تھی۔

نامہ نگار عبدالرشید شکور کے مطابق 20 سال میں یہ پہلا موقع ہے کہ دو پاکستانی کرکٹرز سال کے پانچ بہترین کرکٹرز میں شامل ہوئے ہیں۔ اس سے قبل سنہ 1997 میں وزڈن نے سعید انور اور مشتاق احمد کو سال کےبہترین پانچ کرکٹرز میں شامل کیا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں