آئی پی ایل کے دسویں سیزن کا افتتاح آج

کولکتہ نائٹ رائڈرز تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ خان کی ٹیم کولکتہ نائٹ رائڈرز دو بار یہ ٹورنا منٹ جیت جکی ہے

انڈیا میں پانچ اپریل سے آئی پی ایل کا دسواں سیزن شروع ہو رہا ہے جس میں آٹھ ٹیمیں شرکت کر رہی ہیں۔

افتتاحی تقریب حیدرآباد دکن میں ہوگی جہاں میزبان ٹیم سن رائزرس کا مقابلہ وراٹ کوہلی کی ٹیم رائل چیلنجرز بنگلور سے ہوگا۔ لیکن کوہلی اپنے کندھے میں چوٹ کے سبب ابتدائی میچوں میں شرکت نہیں کر رہے ہیں جبکہ جنوبی افریقہ کے ٹیسٹ کرکٹر اے بی ڈی ویلیئرز بھی پہلے میچ میں نہیں کھیل رہے ہیں۔

انڈین پریمیئر لیگ یا آئی پی ایل کا آغاز سنہ 2008 میں ہوا تھا اور اس کے بعد سے یہ دنیا کے چند اہم کرکٹ ٹورنامنٹ میں شمار ہونے لگا۔

٭ سٹوکس آئی پی ایل کے سب سے مہنگے غیرملکی کھلاڑی

٭ ’آئی پی ایل سے خاندان کا قرض اتاروں گا‘

٭ کیا کوہلی آئی پی ایل کے لیے ٹیسٹ میچ سے باہر ہوئے؟

پہلے سیزن میں پاکستانی کھلاڑیوں کی دھوم تھی لیکن اس کے بعد انڈیا اور پاکستان کے درمیان کشیدگی میں اضافے کے نتیجے میں پاکستانی کھلاڑیوں کو اس میں شامل نہیں کیا گیا۔

آ‏‏ئي پی ایل کے دسویں سال سخت مقابلے کی امید ہے۔ کولکتہ اور ممبئی دو بار چیمپیئن رہ چکے ہیں جبکہ رائل چیلنجرز، دہلی ڈیئر ڈیولز اور کنگز الیون پنجاب کبھی چیمپیئن نہیں بن سکی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کرس گیل اور اے بی ڈی ولیئرز جیسے کھلاڑیوں کے باوجود بنگلور کی ٹیم چیمپیئن نہیں بن سکی ہے

چینئی سپرکنگز اور راجستھان رائلز پر پابندی کے بعد رائزنگ پونے سپر جائنٹ اور گجرات لائنز کو دو سال کے لیے اس ٹورنامنٹ میں جگہ ملی ہے۔

آئی پی ایل کے اس دسویں ایڈیشن میں تین ٹیموں کی قیادت غیر ملکی کھلاڑیوں کے ہاتھوں میں ہے۔ آسٹریلیا کے اوپنر بیٹسمین ڈیوڈ وارنر سن رائزرس حیدرآباد کے کپتان ہیں تو پنجاب کی قیادت آسٹریلیا کے گلین میکسول کے ہاتھوں میں ہے جبکہ آسٹریلیا کے ہی سٹیون سمتھ کو سپرجائنٹس کی قیادت سونپی گئی۔

دوسویں سیزن کے لیے سب سے مہنگے کھلاڑی کے طور پر انگلینڈ کے آل راؤنڈر بین سٹوکس کو خریدا گیا ہے۔

آئی پی ایل ویسٹ انڈیز کے کھلاڑی کرس گیل کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل رہا ہے اور وہ ٹی ٹوئنٹی کی تاریخ میں دس ہزار رنز بنانے والے پہلے کھلاڑی بننے والے ہیں۔ انھیں یہ ہدف حاصل کرنے کے لیے محض 63 رنز کی ضرورت ہے۔ وہ آئی پی ایل کی تاریخ میں سب سے زیادہ 251 چھکے لگانے والے کھلاڑی بھی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption افغانستان کے 18 سالہ لیگ سپنر راشد خان ارمان کے لیے سن رائزرز حیدرآباد نے کی بولی سب سے زیادہ رہی جس نے چار کروڑ روپے کی کامیاب بولی لگائی جبکہ اسی ٹیم نے تجربہ کار افغان بولر محمد نبی کو 30 لاکھ روپے کے عوض خریدا

دسویں سیزن میں افغانستان کے دو کھلاڑیوں کو شامل کیا گیا ہے۔

آئی پی ایل کا فائنل 21 مئی کو حیدرآباد میں کھیلا جائے گا اور ڈیڑھ مہینے کے اس کرکٹ کارنیول میں کل 60 میچز کھیلے جائیں گے۔

آئی پی ایل کی وجہ سے انڈیا کے گھریلو کھلاڑیوں کو انٹرنیشنل کھلاڑیوں کے ساتھ کھیلنے اور پرفارم کرنے کا نادر موقع ملا ہے اور اس کے سبب کئی کھلاڑی انڈین ٹیم میں بھی اپنی جگہ بنانے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں