اگر اب مقابلہ ہوا تو جوشوا سےہی ہو گا کسی اور سےنہیں

Image caption اگر میں نے باکسنگ جاری رکھنے کا فیصلہ کیا تو مقابلہ صرف انتھونی جوشوا سے ہی ہو گا کسی اور سے نہیں

سابق عالمی ہیوی ویٹ چیمپئن ولادیمیر کلچکو نےکہا ہے کہ اگر انھوں نے مستقبل میں کوئی مقابلہ کیا تو وہ انتھونی جوشواکےخلاف ہی ہوگا اور وہ اس کے علاوہ کسی دوسرے باکسر سے مقابلہ نہیں کریں گے۔

گیارہ برس تک ناقابل شکست رہنے والے اکتالیس سالہ ولادیمر کلچکو 29 اپریل کو لندن کے ویمبلی سٹیڈیم میں ہونےوالےایک انتہائی دلچسپ مقابلے میں نوجوان باکسر انتھونی جوشواسے ہار گئے تھے۔ اس میچ کو دیکھنےکے لیے 90 ہزار افراد سٹیڈیم میں موجود تھے۔

انتھونی جوشوا نے ورلڈ ہیوی ویٹ ٹائٹل جیت لیا

میچ کے بعد ایک انٹرویو میں ولادیمیر کلچکو نے کہا کہ اگر انھوں نے کیرئر کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا تو وہ صرف انتھونی جوشواسے مقابلہ ہوگا اور اب کسی اور باکسر سے مقابلہ کرنے کا ارادہ نہیں رکھتے۔

یوکرائن سے تعلق رکھنے والے ولادیمیر کلچکو نے اپنے کیرئیر میں 69 مقابلے کیے جس میں انھیں صرف پانچ بار شکست کا سامنا کرنا پڑا اور انھوں نے اپنے 52 حریفوں کو ناک آؤٹ کیا۔ ولادی میر کلچکو سے تمام بلیٹس 2015 میں اس وقت چھن گئیں تھیں جب برطانوی باکسر ٹائسن فیوری نے جرمنی میں ہونے والے ایک میچ میں انھیں پوائنٹس پر شکست دے دی۔

ٹائسن فیوری 'ذہنی صحت' کی خرابی کی بنیاد پر ولادی میر کلچکو سے دوبارہ مقابلے سے دستبردار ہوگیا تھا اور انھیں جیتی ہوئی تمام بلیٹس چھوڑنی پڑیں جو اب انتھونی جاشوا کے پاس آ چکی ہیں۔

انتھونی جوشوا سے ہارنے کے بعد ولادیمیر کلچکو نے کہا کہ انتھونی جوشواسے مقابلے کے لیے ہونے والے معاہدے میں 'ری میچ' کی شق موجود ہے لیکن وہ اپنے حالیہ مقابلے کا تجزیہ کرنے کے بعد ہی کوئی فیصلہ کریں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption انتھونی جوشوا نے ولادی میر کلچکو کو گیارہویں راونڈ میں ناک آؤٹ کر دیا تھا

ولادیمیر کلچکو نے کہا کہ اس مقابلے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ نئے چیمپئن میں بھی کمزرویاں ہیں۔ انھوں نے کہا کہ انتھونی جاشوا نے وہی کچھ کیا جو اسے کرنا چاہیے تھا۔

ولادی میر کلچکو نے کہا کہ جب انھوں نے چھٹے روانڈ میں انتھونی جاشوا کو گرایا تو انھیں یقین تھا کہ وہ دوبارہ سنبھل نہیں سکے گا لیکن وہ نہ صرف سنبھلا بلکہ میچ میں فاتح رہا۔

اادھر انتھونی جوشوانے کہا ہے کہ ولادیمیر کلچکو کے ساتھ میچ ان کی جو کمزرویاں سامنے آئے ہیں انھیں دور کرنے کی کوشش کریں گے۔ ستائیس سالہ انتھونی جوشوانے پروفیشنل کیرئیر میں صرف انیس میچ کھیلے اور اپنے تمام حریفوں کو ناک آؤٹ کیا۔ یہ پہلا میچ تھا جب انتھونی جوشواکو کسی باکسر نے زمین پر گرایا اور اسے فتح حاصل کرنے کے لیےگیارہویں راونڈ تک جانا پڑا۔

Image caption چھٹے راونڈ میں ولادی میر کلچکو نے انتھونی جوشوا کو زور دار مکا مار کر گر دیا تھا لیکن نوجوان باکسر نہ صرف اٹھ کھڑا ہوا بلکہ مقابلہ بھی جیت لیا

کلچکو سے پہلے انتھونی جوشواکو ڈیلن وائٹ نامی باکسر نے انھیں ساتویں راوانڈ تک لے گیا تھا۔ اس میچ میں بھی جاشوا نے ڈیلن وائٹ کو ناک آؤٹ کر دیا تھا۔

اسی بارے میں