ویسٹ انڈیز نے پاکستان کو 106 رنز سے ہرا دیا

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

بارباڈوس میں کھیلے جانے والے دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں ویسٹ انڈیز نے پاکستان کو 106 رنز سے شکست دے دی ہے۔

کھیل کے آخری دن پاکستانی ٹیم ویسٹ انڈیز کے ہدف 188 رنز کے تعاقب میں 81 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

بارباڈوس ٹیسٹ کا تفصیلی سکور کارڈ

کیا مصباح 65 سالہ ریکارڈ توڑ پائیں گے؟

پاکستان کی جانب سے اظہر علی اور احمد شہزاد نے دوسری اننگز شروع کی اور پہلی وکٹ کی شراکت میں دس رنز بنائے۔

پاکستان کے آؤٹ ہونے والے بیٹسمینوں میں اظہر علی دس، بابر اعظم صفر، یونس خان پانچ، مصباح الحق صفر، اسد شفیق صفر، احمد شہزاد 14 اور شاداب خان ایک سکور رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔

پاکستان کی جانب سے سرفراز احمد اور محمد عامر نے جارحانہ انداز میں کھیلتے ہوئے 42 رنز کی شراکت کی تو پاکستانی مداحوں کو میچ کے دلچسپ موڑ تک جانے کی کچھ امید لگی۔

تاہم محمد عامر 20 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے جس کے بعد یاسر شاہ بھی صفر کے انفرادی سکور پر پویلین لوٹ گئے۔

پاکستان کے آؤٹ ہونے والے آخری کھلاڑی سرفراز احمد تھے جنھوں نے 23 رنز بنائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

ویسٹ انڈیز کی جانب سے دوسری اننگز میں گیبریئل نے پانچ جبکہ ہولڈر نے تین اور جوزف نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

اس سے قبل ویسٹ انڈیز کی دوسری اننگز جمعرات کو کھیل کے آغاز میں ہی اس وقت سمٹ گئی جب یاسر شاہ نے مجموعی سکور میں چار رنز کے اضافے کے بعد بشو کو کیچ کروا کے ویسٹ انڈیز کی دسویں وکٹ حاصل کر لی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

انھوں نے اس اننگز میں 94 رنز کے عوض سات کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جو عمران خان کے بعد ویسٹ انڈیز کے خلاف کسی پاکستانی بولر کی ٹیسٹ میچ میں دوسری بہترین کارکردگی ہے۔

یاسر شاہ نے اس میچ کی پہلی اننگز میں بھی دو وکٹیں لی تھیں یوں اس میچ میں ان کی وکٹوں کی تعداد نو رہی۔

دوسری اننگز میں ویسٹ انڈیز کا سکور 268 رنز رہا اور اس مجموعے تک پہنچنے میں شائے ہوپ کے 90 اور کریگ بریتھویٹ کے 43 رنز نے اہم کردار ادا کیا۔

پاکستان کی جانب سے دوسری اننگز میں یاسر شاہ کے علاوہ محمد عباس نے دو اور محمد عامر نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اگر پاکستان یہ ٹیسٹ میچ جیتنے میں کامیاب ہو جاتا تو پاکستانی کرکٹ کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہوتا کہ وہ ویسٹ انڈیز کو اس کی سرزمین پر ٹیسٹ سیریز میں شکست دیتا۔

پاکستان نے اس سیریز کا پہلا ٹیسٹ سات وکٹوں سے جیتا تھا جبکہ آخری ٹیسٹ دس سے 14 مئی تک کھیلا جائے گا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں