سارا دن ویسٹ انڈیز کی سست رفتار بیٹنگ

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ AFP

ڈومینیکا کے ونڈزر سٹیڈیم میں کھیلے جانے والے تیسرے اور آخری کرکٹ ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کے اختتام پر پاکستان کے 376 رنز کے جواب میں ویسٹ انڈیز نے پانچ وکٹوں کے نقصان پر 218 رنز بنا لیے۔

ویسٹ انڈیز کو پاکستان کی پہلی اننگز کا خسارہ ختم کرنے کے لیے مزید 158 رنز درکار ہیں۔

ویسٹ انڈیز نے نہایت سست روی کا مظاہرہ کیا اور پورے دن کی بیٹنگ میں صرف 204 رنز سکور کیے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

ویسٹ انڈیز کے آؤٹ ہونے والے کھلاڑیوں میں کریگ بریتھویٹ 29، کائرن پاول نے 31 ہیٹمر 17، ہوپ 29 اور وشال سنگھ آٹھ رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

اس کے بعد ان فارم بلےباز چیز محمد عامر کی ایک تیز گیند کہنی پر لگنے سے زخمی ہو گئے اور انھیں میدان سے باہر جانا پڑا۔

پہلے تین کھلاڑیوں کو یاسر شاہ نے آؤٹ کیا جب کہ ہوپ چائے کے وقفے سے پہلے آخری گیند پر اظہر علی کا شکار بن گئے۔ اس کے بعد محمد عباس نے وشال سنگھ کو آؤٹ کیا۔

مزاج مختلف لیکن ایک جیسے حالات

ویسٹ انڈیز نے جمعے کو اپنی پہلی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا تو پاول اور بریتھویٹ نے پہلی وکٹ کی شراکت میں 43 رنز بنائے۔

اس سے قبل میچ کے دوسرے روز پاکستان کی پوری ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 376 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

پاکستان کی جانب سے اظہر علی نے سب سے زیادہ 127 رنز سکور کیے۔ ان کے علاوہ بابر اعظم، مصباح الحق اور سرفراز احمد نے نصف سنچریاں سکور کیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption سرفراز احمد نے تیز کھیلتے ہوئے عمدہ نصف سینچری سکور کی

ویسٹ انڈیز کی جانب سے ریسٹن چیز نے چار، ہولڈر نے تین، بشو نے دو، جب کہ جوزف نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

بدھ کو شروع ہونے والے اس ٹیسٹ میچ میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر پاکستان کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی تھی۔

پاکستان کے لیے یہ میچ نہ صرف اس لیے اہم ہے کہ اس میں فتح کی صورت میں وہ پہلی بار ویسٹ انڈیز کو اس کی سرزمین پر ٹیسٹ سیریز میں شکست دینے میں کامیاب ہو گا۔

یہ پاکستان کے کپتان مصباح الحق اور یونس خان کے کریئر کا آخری میچ ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں