مصباح اور یونس نے کھیل اور شائقین کو بہت کچھ دیا: ڈیوڈ رچرڈسن

مصباح الحق اور یونس خان تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے چیف ایگزیکیٹو ڈیوڈ رچرڈسن کا کہنا ہے کہ مصباح الحق اور یونس خان کرکٹ کی تاریخ میں پاکستان کی کئی یادگار کارکردگیوں کا حصہ رہے ہیں اور دنیا ان دونوں کی کارکردگی کی معترف ہے۔

پاکستان کی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق اور ٹیسٹ کرکٹ میں دس ہزار رنز بنانے والے واحد پاکستانی بلے باز یونس خان نے اتوار کو دنیائے کرکٹ کو خیرباد کہہ دیا ہے۔

مصباح اور یونس ستارے نہیں، استعارے تھے

’اب پرانے دوستوں کے ساتھ وقت گزار سکوں گا‘

'مصباح نے پاکستان کا کیا بگاڑا تھا'

الوداع مصباح، الوداع یونس

شکریہ یونس خان

ان کھلاڑیوں کی ریٹائرمنٹ پر انھیں خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے ڈیوڈ رچرڈسن کا کہنا تھا کہ 'ان دونوں بلے بازوں نے اپنے کریئرز میں اس کھیل اور شائقین دونوں کو بہت کچھ دیا ہے۔'

انھوں نے کہا کہ 'مصباح الحق کئی مواقع پر پاکستانی اننگز کی بنیاد بنے اور انھوں نے بار بار ٹیم کو مشکل حالات سے نکالا۔'

رچرڈسن کا کہنا تھا کہ مصباح آہستہ کھیلنے کے لیے جانے گئے تاہم جب ضرورت پڑی تو تیزی سے رنز بنانے سے بھی نہیں چوکے اور جس کی مثال 2014 میں آسٹریلیا کے خلاف 56 گیندوں پر ان کی سنچری ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ ICC
Image caption ڈیوڈ رچرڈسن نے ہی مصباح الحق کو لاہور میں عالمی نمبر ایک ٹیسٹ ٹیم کا اعزازی گرز دیا تھا

آئی سی سی کے چیف ایگزیکیٹو نے مصباح الحق کی کپتانی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ 'ایک ایسے قائد تھے جنھوں نے مشکل حالات میں قیادت سنبھالی اور ٹیم کو آئی سی سی کی ٹیسٹ رینکنگ میں سرفہرست پہنچا دیا۔ وہ ایک حقیقی کھلاڑی اور دوسروں کے لیے مثال ہیں۔'

یونس خان کو پاکستانی کرکٹ کے بہترین بلے بازوں میں شمار کرتے ہوئے ڈیوڈ رچرڈسن نے کہا کہ وہ بھی اکثر ایسے حالات میں بہترین کارکردگی دکھاتے رہے جب کچھ پاکستانی ٹیم کے حق میں نہیں جا رہا تھا۔

'سری لنکا کے خلاف ٹرپل سنچری اور انڈیا کے خلاف سیریز برابر کرنے کے لیے بنائی جانے والی ڈبل سنچری ایسی کچھ مثالیں ہیں جو یونس کو باقی کھلاڑیوں سے ممتاز کرتی ہیں۔'

آئی سی سی کے مطابق ڈیوڈ رچرڈسن نے تنظیم کی جانب سے دونوں کھلاڑیوں کے مستقبل کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ 'یہ دونوں آنے والے برسوں میں جو بھی کرنا چاہیں اس سلسلے میں ان کے لیے میری نیک تمنائیں ان کے ساتھ ہیں۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں