آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی: سرفراز کے ساتھ کوہلی کا بھی کڑا امتحان

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

کرکٹ ورلڈ کپ کے بعد آئی سی سی کا دوسرا بڑا ٹورنامنٹ چیمپیئنز ٹرافی ہے جو آئندہ ہفتے انگلینڈ میں شروع ہو رہا ہے۔

اس ٹورنامنٹ میں آئی سی سی کی عالمی درجہ بندی میں پہلی آٹھ پوزیشنز پر موجود ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔

ان ٹیموں میں پاکستان، آسٹریلیا، جنوبی افریقہ، انڈیا، سری لنکا، بنگلہ دیش، نیوزی لینڈ اور انگلینڈ شامل ہیں۔

پاکستان کے پاس چیمپیئنز ٹرافی میں ہارنے کو کچھ نہیں: سرفراز احمد

چیمپیئنز ٹرافی میں پاکستان کا مایوس کن ریکارڈ

دلچسپ بات یہ ہے کہ ان ٹیموں میں سے چھ ٹیمیں ایسی ہیں جن کے کپتان پہلی مرتبہ چیمپیئنز ٹرافی میں اپنی ٹیم کی قیادت کے فرائض نبھائیں گے۔

سری لنکا اور جنوبی افریقہ وہ دو ٹیمیں ہیں جن کے کپتان اس سے قبل سنہ 2013 میں ہونے والی چیمپیئنز ٹرافی میں بھی کپتانی کر چکے ہیں۔

اس ٹورنامنٹ میں پہلی مرتبہ کپتانی کرنے والے کھلاڑیوں میں سرفراز احمد، وراٹ کوہلی، ایئن مورگن، سٹیون سمتھ، مشرفی مرتضیٰ اور کین ولیمسن شامل ہیں۔

ان آٹھ ٹیموں میں سے جنوبی افریقہ کے اے بی ڈولیئرز اور سری لنکا کے اینجلو میتھیوز وہ کھلاڑی ہیں جو اس سے قبل بھی چیمپیئنز ٹرافی میں کپتانی کر چکے ہیں۔

آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی میں پہلی مرتبہ کپتانی کرنے والے کپتان:

سرفراز احمد

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کی ایک روزہ کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد اس ٹورنامنٹ میں سے سب کم تجربہ رکھنے والے کپتان ہوں گے۔ رواں سال فروری میں اظہر علی کے کپتانی سے مستعفی ہونے کے بعد سرفراز احمد کو یہ ذمہ داری سونپی گئی۔

ان کی کپتانی میں اب تک پاکستان نے چار ایک روزہ میچ کھیلے ہیں جن میں سے تین میں انھیں کامیابی اور ایک میں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

وراٹ کوہلی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

انڈیا کو ورلڈ ٹی 20، ایک روزہ میچوں کا عالمی کپ اور چیمپیئنز ٹرافی جتوانے والے کپتان مہیندر سنگھ دھونی کی جانب سے کپتانی چھوڑنے کے بعد وراٹ کوہلی کو کپتان بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔

2013 میں کپتانی سنبھالنے کے بعد سے وراٹ کوہلی اب تک کل 20 میچوں میں انڈین ٹیم کی قیادت کر چکے ہیں جن میں سے صرف چار میچوں میں انھیں شکست جبکہ 16 میچوں میں کامیابی ہوئی ہے۔

ایئن مورگن

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

بائیں ہاتھ سے بیٹنگ کرنے والے انگلینڈ کے مڈل آرڈر بیٹسمین نے 2011 میں پہلی مرتبہ انگلینڈ کی ون ڈے ٹیم کی کپتانی سنبھالی تھی تاہم انھیں یہ موقع اس وقت کے انگلینڈ کے کپتان ایلسٹر کک کی عدم موجودگی کی وجہ سے عبوری طور پر دیا گیا تھا۔

ایئن مورگن اب تک کل 57 میچوں میں انگلش ٹیم کی قیادت کر چکے ہیں جن میں سے 31 مقابلوں میں انھیں کامیابی ہوئی ہے جبکہ ان کی قیادت میں انگلینڈ کی ٹیم اب تک 23 میچ ہار چکی ہے۔

سٹیون سمتھ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی میں عالمی چیمپیئن آسٹریلیا کی قیادت اس مرتبہ سٹیون سمتھ کر رہے ہیں۔ ان سے قبل 2013 میں آسٹریلوی ٹیم کے کپتان جارج بیلی تھے۔

سمتھ کی کپتانی میں اب تک آسٹریلیا نے کل 38 میچ کھیلے ہیں۔ 23 ایک روزہ میچوں میں انھیں کامیابی ہوئی ہے جبکہ 14 میں انھیں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔

کین ولیمسن

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

اس وقت عالمی کرکٹ میں صف اول کے بیٹسمینوں میں شامل کین ولیم سن آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی میں پہلی مرتبہ نیوزی لینڈ کی ایک روزہ ٹیم کی کپتانی کر رہے ہیں۔

کین ولیم سنہ 2012 سے اب تک 38 ایک روزہ میچوں میں کپتانی کے فرائض سرانجام دے چکے ہیں۔ ان کی کپتانی میں نیوزی لینڈ کو 18 میچوں میں شکست اور 18 ہی میں کامیابی ہوئی ہے۔

مشرفی مرتضیٰ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سنہ 2006 کے بعد آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی میں جگہ بنانے والی بنگلہ دیش کی ٹیم کی قیادت مشرفی مرتضیٰ کر رہے ہیں۔ آخری مرتبہ بنگلہ دیش نے یہ ٹورنامنٹ حبیب البشر کی قیادت میں کھیلا تھا۔ اس مرتبہ بہتر رینکنگ کی وجہ سے بنگلہ دیش کو یہ ٹورنامنٹ ایک بار پھر کھیلنے کا موقع ملا ہے۔

مشرفی مرتضیٰ کل 43 میچوں میں بنگلہ دیش کی ون ڈے ٹیم کی قیادت کر چکے ہیں۔ ان کی کپتانی میں بنگلہ دیش کو 26 میچوں میں کامیابی اور 16 میں شکست ہوئی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں