چیمپیئنز ٹرافی: بنگلہ دیش کی نیوزی لینڈ کو 5 وکٹوں سے شکست، محمود اللہ اور شکیب کی سنچری

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ابتدائی وکٹوں کے نقصان کے بعد شکیب نے بنگلہ دیش کو سہارا دیا اور اپنی نصف سنچری مکمل کر لی

انگلینڈ اور ویلز میں کھیلنے جانے والی چیمپیئنز ٹرافی ٹورنامنٹ کے نویں میچ میں بنگلہ دیش نے نیوزی لینڈ کو پانچ وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔

نیوزی لینڈ شکست کے بعد ٹورنامنٹ سے باہر ہو گیا ہے جبکہ بنگلہ دیش کی سیمی فائنل میں رسائی تب تک یقینی نہیں ہوگی جب تک انگلینڈ کل (سنیچر) کو ہونے والے میچ میں آسٹریلیا کو شکست دے دے۔

جمعے کو ٹورنامنٹ کے کئی اور میچوں کی طرح بنگلہ دیش اور نیوزی لینڈ کے درمیان کھیلے جانے والا ٹورنامنٹ کا نواں میچ بارش کے باعث تاخیر سے شروع ہوا جہاں ٹاس جیت کر نیوزی لینڈ نے پہلے بیٹنگ کی اور بنگلہ دیش کو جیت کے لیے 266 رنز کا ہدف دیا۔

تفصیلی سکور کارڈ

بنگلہ دیش نے 266 رنز کا ہدف پانچ وکٹوں کے نقصان پر 49ویں اوور میں حاصل کر لیا۔ بنگلہ دیش کی کامیابی میں شکیب الحسن اور محمود اللہ کی دو سو رنز سے زائد شراکت داری نے اہم کردار ادا کیا۔

دونوں بلے بازوں نے نہ صرف اپنی ٹیم کو کامیابی سے ہمکنار کیا بلکہ اپنی اپنی سنچری بھی مکمل کی۔

شکیب الحسن 114 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ محمود اللہ 102 رنز پر ناٹ آؤٹ رہے۔

بنگلہ دیش نے جب اپنی بیٹنگ شروع کی تو ان کے سب سے کامیاب بلے باز تمیم اقبال پہلے ہی اوور میں ٹم ساؤتھی کی گیند پر بغیر کوئئ رن بنائے آؤٹ ہو گئے۔

تیسرے اوور میں ٹم ساؤتھی نے ایک اور وکٹ حاصل کی جب صابر رحمان بھی آٹھ رنز بنا کر وکٹ کیپر رانچی کو کیچ دے بیٹھے۔

ٹم ساؤتھی نے اپنی خطرناک بولنگ کا سلسلہ جاری رکھا اور پانچویں اوور میں سومیا سرکار کو آؤٹ کر دیا جنھوں نے صرف تین رنز بنائے۔

12ویں اوور میں کپتان مشفق الرحیم، جن کی آج سالگرہ بھی ہے، نے ایڈم ملنے کو ایک شاندار چوکا لگایا لیکن اگلی ہی گیند پر وہ 14 رنز بنا کر بولڈ ہو گئے جس کے ساتھ بنگلہ دیش کی ٹورنامنٹ میں رہنے کی امیدیں مدہم پڑ گئیں۔

یاد رہے کہ گروپ اے کی ان دونوں ٹیموں کے لیے یہ میچ نہایت اہم ہے کیونکہ ہارنے والی ٹیم ٹورنامنٹ سے باہر ہو جائیگی۔

آج میچ شروع ہونے کے بعد مارٹن گپٹل اور لیوک رانچی نے نیوزی لینڈ کی جانب سے اننگز کی شروعات کی اور بنگلہ دیش کی جانب سے مشرفی مرتضی اور مستفیظ الرحمان نے بولنگ کا آغاز کیا۔

سکور جب 46 رنز پر پہنچا تو آج کے میچ میں ٹیم میں شامل ہونے والے تسکین احمد نے آٹھویں اوور کی پہلی گیند پر رانچی کو کیچ آؤٹ کرا دیا جو 16 رنز بنا سکے۔

69 کے سکور پر اپنا دوسرا اوور کرانے والے روبیل حسین نے گپٹل کو 33 رنز پر آؤٹ کر کے اپنی ٹیم کے لیے دوسری کامیابی حاصل کر لی۔

اس کے بعد کپتان کین ولیمسن اور راس ٹیلر نے 50 رنز کی شراکت جوڑی۔ کپتان ولیمسن نے اپنی عمدہ بیٹنگ کا سلسلہ جاری رکھا اور لگاتارتیسرے میچ میں نصف سنچری بنانے میں کامیاب ہوئے ۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ایڈم ملنے نے بنگلہ دیش کے کپتان مشفق الرحیم کو 14 رنز پر بولڈ کر دیا

راس ٹیلر کے ساتھ 83 رنز کی شراکت قائم کرنے کے بعد کین ولیمسن 57 رنز بنا کر 30ویں اوور کی آخری گیند پر رن آؤٹ ہو گئے۔

تسکین احمد نے 39ویں اوور میں راس ٹیلر کو ایک ہلکی گیند کرا کر جھانسا دیا اور ان کو آؤٹ کر کے اپنی دوسری وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے۔ راس ٹیلر نے بھی اچھی بیٹنگ کی اور 63 رنز بنائے۔

اس میچ میں بنگلہ دیش کی ٹیم کا حصہ بننے والے مصدق حسین نے 44ویں اوور میں نیوزی لینڈ کو دہرا نقصان پہنچایا جب انھوں نے پہلے برووم کو 37 رنز پر آؤٹ کر دیا اور دو گیند کے بعد کورے اینڈرسن اپنی پہلی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔

بنگلہ دیش نے اننگز کے آخری مراحل میں اپنی نپی تلی بولنگ کا سلسلہ جاری رکھا اور 46ویں اوور کی آخری گیند پر مصدق حسین نے جمی نیشم کو 23 رنز پر آؤٹ کر کے اپنی تیسری اور ٹیم کے لیے ساتویں کامیابی حاصل کر لی۔

بنگلہ دیش نے کامیابیوں کا سلسلہ جاری رکھا جب مستفیظ نے ایڈم ملنے کو سات رنز پر بولڈ کر کے نیوزی لینڈ کی آٹھویں وکٹ حاصل کر لی۔

انگلینڈ چیمپیئنز ٹرافی کے سیمی فائنل میں پہنچ گیا

آسٹریلیا اور بنگلہ دیش کا میچ بارش کی نذر

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے ٹورنامنٹ میں اپنی تیسری نصف سنچری بنائی

نیوزی لینڈ نے اپنی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی ہے جبکہ بنگلہ دیش نے تسکین احمد اور مصدق حسین کو ٹیم میں شامل کیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں