کوچ کے پلان پر عمل کیا، فرق سب کے سامنے ہے: حسن علی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption حسن علی کو جنوبی افریقہ کے خلاف میچ میں بہترین کھلاڑی ہونے کا اعزاز ملا

انگلینڈ اور ویلز میں جاری آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی میں جنوبی افریقہ کے خلاف عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے فاسٹ بولر حسن علی اپنی کامیابی کو سخت محنت کا نتیجہ قرار دیتے ہیں۔

حسن علی نے جنوبی افریقہ کے خلاف میچ میں صرف چوبیس رنز دے کر تین وکٹیں حاصل کرنے کے علاوہ دو کیچز بھی لیے۔ ان کی یہ عمدہ کارکردگی انہیں بین الاقوامی کرکٹ میں پہلی بار مین آف دی میچ بنائے جانے کا سبب بھی بنی۔

پاکستان بارش سے متاثرہ میچ میں 19 رنز سے فاتح

’پاکستان ایک گیم ہارتا ہے تو لوگ پیچھے پڑ جاتے ہیں‘

حسن علی بی بی سی اردو کو دیے گئے انٹرویو میں کہتے ہیں کہ جنوبی افریقہ کے خلاف میچ میں ان کے لیے اچھا موقع تھا کہ وہ پرفارمنس دیں اور انہیں خوشی ہے کہ ان کی کارکردگی ٹیم کے کام آئی اور وہ یہ سمجھتے ہیں کہ اس کارکردگی کے بعد اور مین آف دی میچ بننے سے ان کے اعتماد میں اضافہ ہوا ہے اور یہ کارکردگی آنے والے میچوں میں کام آئے گی۔

حسن علی کا کہنا ہے کہ بھارت کے خلاف میچ میں ان کی کارکردگی اچھی نہیں رہی تھی اور ان کے آخری دو تین اوورز خراب رہے تھے جس کے بعد 'ٹیم میٹنگ میں کوچ نےجو پلان دیا اسی پر عمل کرنے کی کوشش کی اور فرق سب کے سامنے ہے۔'

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption 'ٹیم میٹنگ میں کوچ نےجو پلان دیا اسی پر عمل کرنے کی کوشش کی اور فرق سب کے سامنے ہے`

حسن علی کا کہنا ہے کہ وہ سخت محنت پر یقین رکھتے ہیں خود پر بہت زیادہ اعتماد ہے۔ 'میں اسی بات کو ذہن میں رکھتے ہوئے میدان میں اترتا ہوں۔'

انھوں نے کہا کہ اس کے علاوہ بولنگ کوچ اظہرمحمود نے ان کی کارکرگی میں بہتری لانے کے لیے بہت محنت کی ہے جبکہ ٹیم کے تمام ہی سینئر کھلاڑیوں نے ہمیشہ ان کی حوصلہ افزائی کی ہے۔

حسن علی کو سری لنکا کے خلاف ہونے والے میچ کی اہمیت کا بخوبی اندازہ ہے اور ان کا کہنا ہے کہ وہ کوشش کریں گے کہ اپنی موجودہ عمدہ کارکردگی کو برقرار رکھتے ہوئے اس میچ میں بھی اچھی بولنگ کریں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں