’امید ہے تمام ٹیمیں پاکستان آئیں اور ہمارے ساتھ کھیلیں: سرفراز احمد

سرفراز تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہا ہے کہ پاکستان کی چیمپیئنز ٹرافی میں کامیابی دنیا کی بڑی ٹیموں کو دوبارہ پاکستان میں کرکٹ کھیلنے میں حوصلہ افزائی کر سکتی ہے۔

خیال رہے کہ اتوار کو چیمپئز ٹرافی کے اوول میں کھیلے گئے فائنل میں پاکستان نے انڈیا کو 180 رنز سے شکست دی تھی۔

’انھیں یہ خوشی چاہیے اور کل ہی چاہیے‘

’انڈیا سے بڑے ٹورنامنٹ میں ہمیشہ ہارنے کا داغ دھو دیا‘

پاکستان کرکٹ کے چیمپیئنز کا چیمپیئن

پاکستان کے شہر لاہور میں سنہ 2009 میں سری لنکن کرکٹ ٹیم کے حملے کے بعد دنیائے کرکٹ کے تمام بڑی ٹیموں نے پاکستان میں سکیورٹی خدشات کی بنا پر دورہ کرنے سے انکار کیا ہے۔ اس حملے میں چھ پولیس ہلاک اور سات کھلاڑی زخمی ہوئے تھے۔

30 سالہ سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ ’امید ہے کہ اس کامیابی سے پاکستانی کرکٹ کو فروغ ملے گا اور تمام ٹیمیں یہاں آئیں گی اور ہمارے ساتھ کھیلیں گی۔‘

پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ نہ ہونے کے باعث گذشتہ کئی برسوں سے پاکستان اپنی ہوم سیریز متحدہ عرب امارات میں کھیل رہا ہے تاہم ورلڈ الیون نے ستمبر میں پاکستان کا دورہ متوقع ہے جس میں وہ تین ٹی 20 میچز کھیلے گی۔

پاکستان سپر لیگ کے سیزن ٹو کا فائنل بھی رواں سال سخت سکیورٹی میں لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں کھیلا گیا تھا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کوچ ملی آرتھر کا کہنا آئی سی سی کے منظور شدہ دورے کے بارے میں کہنا تھا کہ 'امید ہے کہ اس سے مستقبل کا راستہ ہموار ہوگا۔'

ان کا کہنا تھا کہ 'مجھے یقین ہے کہ پاکستانی قوم آج بہت خوش ہوگی کیونکہ وہ اس کے مستحق ہیں۔ امید کرتے ہیں اس سے پاکستان کو ایک نئی تحریک ملے گی۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں