وطن واپسی پر پاکستانی کرکٹ ٹیم کا والہانہ استقبال

حسن علی

چیمپیئنز ٹرافی کے فائنل میں روایتی حریف انڈیا کو ہرانے کے بعد وطن واپسی پر پاکستانی ٹیم کے کھلاڑیوں کا شاندار استقبال کیا گیا۔

پلیئر آف دا ٹورنامنٹ حسن علی جب رات کے ڈھائی بجے لاہور کے علامہ اقبال ہوائی اڈے پر پہنچے تو انھیں پھولوں کے ہار پہنائے گئے اور ان کی گاڑی پر گلاب کی پتیاں نچھاور کی گئیں۔

چیمپیئنز ٹرافی میں پاکستان کی تاریخی فتح: خصوصی ضمیمہ

ہوائی اڈے پر لوگوں کی بڑی تعداد نے کھلاڑیوں کا پرتپاک استقبال کیا اور انھیں گلدستے پیش کیے گئے۔ صوبائی وزیر رانا مشہود استقبال کے لیے ہوائی اڈے پر موجود تھے۔

بابر اعظم تصویر کے کاپی رائٹ AP

قومی ٹیم کے بلےباز بابر اعظم، کی گاڑی بھی گلاب کی پتیوں سے ڈھک گئی۔ بابر اعظم نے فائنل میچ میں انڈیا کے خلاف 46 رنز کی اہم اننگز کھیلی تھی۔

اس موقعے پر سکیورٹی کے انتظامات لوگوں کی بڑی تعداد کی وجہ سے دھرے کے دھرے رہ گئے اور پرجوش شائقین لاؤنج کے اندر پہنچ گئے۔

دھکم پیل کی وجہ سے کھلاڑیوں کو صحیح طریقے سے گارڈ آف آنر بھی نہیں دیا جا سکا۔

پاکستانی شائقین تصویر کے کاپی رائٹ SHAHZAIB AKBER

چیمپینز ٹرافی کی فاتح پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد جب ٹرافی کے ساتھ کراچی پہنچے تو نہ صرف کراچی کے ایئرپورٹ پر ان کا زبردست استقبال کیا گیا بلکہ ان کے گھر کے باہر ہزاروں کی تعداد میں شائقین نے ان کی آمد پر خوشی کا اظہار کیا۔

سرفراز احمد اپنے ساتھی کرکٹر رومان رئیس کے ساتھ کراچی پہنچے۔

ہوائی اڈے پر گورنر سندھ محمد زبیر اور میئر کراچی وسیم اختر ان کے استقبال کے لیے موجود تھے۔

ایئرپورٹ کے باہر بھی شائقین کی بڑی تعداد سرفراز احمد کی ایک جھلک دیکھنے کے لیے موجود تھی جو پاکستان زندہ باد کے نعرے لگارہے تھے۔

سرفراز تصویر کے کاپی رائٹ AFP

ایئرپورٹ سے گھر پہنچنے میں سرفراز احمد کو دو گھنٹے لگ گئے کیونکہ ایئرپورٹ سے باہر سڑکوں پر بھی لوگوں کی ایک بڑی تعداد انہیں خوش امدید کہنے کے لیے موجود تھی۔

کپتان سرفراز احمد نے اس موقعے پر کہا کہ ’مجھے امید ہے کہ یہ فتح بھلائی نہیں جا سکے گی اور ہمیشہ یاد رکھی جائے گی۔‘

سرفراز احمد ٹرافی اپنے ساتھ لے کر آئے ہیں۔ ان کے استقبال کے لیے آنے والے شائقین ٹرافی دیکھ کر خوشی سے بےقابو ہو گئے۔

سرفراز کا گھر تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سرفراز احمد کراچی کے علاقے بفرزون میں رہتے ہیں۔

پاکستانی ٹیم کی فائنل میں جیت کے بعد سے ہی ان کے گھر کے باہر شائقین اپنی خوشی کا اظہار کرنے کے لیے جمع ہوگئے تھے اور سرفراز احمد کی آمد سے پہلے ہی ان کے گھر اور گلی کو ان کی تصویر اور روشنیوں سے سجا دیا گیا تھا۔

سرفراز کی بالکنی میں آمد کے بعد شائقین نے جب ’موقع موقع‘ گانا شروع کیا تو سرفراز نے لہرا لہرا کر ان کا ساتھ دیا۔

فخر زمان تصویر کے کاپی رائٹ AFP

فائنل میچ کے مردِ میداں فخر زمان پشاور ہوائی اڈے پر اترنے کے بعد اپنی آبائی علاقے مردان پہنچے تو ان کا بھی پرجوش استقبال کیا گیا۔

فخر زمان نے اس موقعے پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’ہم اس ٹورنامنٹ میں آٹھویں نمبر پر تھے اور پھر اسے جیتنا ہمارے لیے بہت بڑی بات ہے اور ہمیں اس پر بہت فخر ہے۔ ہماری ٹیم میں ایسی ہم آہنگی تھی جیسے یہی ٹیم پچھلے دس پندرہ سال سے اکٹھی کھیل رہی ہے۔‘

انھوں نے کہا کہ انھیں سب سے زیادہ خوشی ایشون کی پٹائی کر کے ہوئی کیوں کہ وہ بہت اچھا بولر ہے۔

اسی بارے میں