پاکستان بمقابلہ ورلڈ الیون کا انعقاد پاکستان میں کروانے کا منصوبہ زیرِ غور

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

عالمی سطح پر کرکٹ کا نگراں ادارہ آئی سی سی کا کہنا ہے کہ پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ کی واپسی میں مدد کے سلسلے میں ادارہ ورلڈ الیون ٹیم تیار کر رہا ہے جو اسی سال پاکستان کا دورہ کرے گی۔

آئی سی سی کا کہنا ہے کہ اس سال پاکستان بمقابلہ ورلڈ الیون کے مقابلے لاہور میں منعقد کروانے کا منصوبہ تیار کیا جا رہا ہے جس میں تین ٹی ٹوئنٹی میچ ہوں گے اور انھیں انٹرنیشنل میچ کا درجہ حاصل ہوگا۔

پاکستان کرکٹ کے چیمپیئنز کا چیمپیئن

’ویلکم بیک پاکستان کرکٹ‘

یاد رہے کہ 2009 میں پاکستان میں سرکی لنکن کرکٹ ٹیم پر لاہور میں حملے کے بعد سے پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ تقریباً نہ ہونے کے برابر ہے اور پاکستان کو متحدہ عرب امارات می6ں اپنی ہوم سیریز کی میزبانی کرنی پڑی ہے۔

آئی سی سی کا کہنا ہے کہ ورلڈ الیون اور پاکستان کے مقابلوں کے بارے میں مزید معلومات وقت کے ساتھ ساتھ جاری کی جائیں گی۔

اس کے علاوہ آئی سی سی کی جانب سے کیے گئے اعلانات میں امریکہ میں کرکٹ کی نگران تنظیم یو ایس اے سی اے کی آئی سی سی سے رکنیت معطل کرنا بھی شامل تھا۔

یو ایس اے سی اے کئی سالوں سے انتظامی مشکلات کا شکار رہی ہے اور ماضی میں اسے دو مرتبہ معطل بھی کیا جا چکا تھا۔ تاہم آئی سی سی کا کہنا ہے کہ یو ایس اے سی اے کی معطلی سے امریکہ میں موجود کرکٹ ٹیموں پر اثر نہیں پڑے گا اور انھیں عبوری منتظم کی نگرانی میں اپنی سرگرمیاں جاری رکھنے دی جائیں گی۔

یاد رہے کہ حال ہی میں افغانستان اور آئرلینڈ کی ٹیموں کو انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے فل ممبرز کا درجہ دے دیا گیا ہے جس کے بعد اب یہ دونوں ممالک بھی ٹیسٹ کرکٹ کھیل سکیں گے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں