ابتدائی نقصان کے بعد انگلینڈ کی بہتر بیٹنگ، روٹ کی سنچری

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ AFP

لارڈز میں کھیلے جانے والے پہلے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے پہلے دن کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے جنوبی افریقہ کے خلاف پانچ وکٹوں کے نقصان پر 357 رنز بنائے ہیں۔

پہلے دن کے کھیل کے اختتام پر جو روٹ اور معین علی کریز پر موجود تھے اور دونوں نے بالترتیب 184 اور 61 رنز بنائے تھے۔

لارڈز میں کھیلے جانے والے اس میچ میں انگلینڈ کی کپتانی جو روٹ کر رہے ہیں۔

انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو اسے اننگز کے ابتدا میں ہی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا اور اس کے چار اہم کھلاڑی 76 رنز کے مجموعی سکور پر ہی پویلین لوٹ گئے۔

تفصیلی سکور کارڈ کے لیے کلک کریں

اس کے بعد کپتان جو روٹ نے آل روانڈر بین سٹوکس کے ساتھ مل کر اننگز کو آگے بڑھانا شروع کیا۔ جو روٹ نے عمدہ کھیل پیش کرتے ہوئے اپنی سنچری مکمل کی۔

بین سٹوکس نصف سنچری سکور کر کے فاسٹ بولر کاغیزو ربادہ کے باونسر کو ہک کرنے کی کوشش میں وکٹ کیپر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

انگلینڈ کو ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ اس وقت مہنگا پڑا جب ابتدائی چھ اوروں میں اس کے دونوں اوپنر آؤٹ ہو گئے۔

سب سے پہلے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی ایلسٹر کک تھے جو صرف تین رنز بنا کر ورنن فلینڈر کی گیند پر وکٹ کیپر کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے کیٹن جیننگز بھی زیادہ دیر کریز پر نہ ٹہر سکے اور سترہ کے مجموعی سکور آؤٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے۔

گیری بیلنس اور جونی بیرسٹو بھی زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹہر سکے اور جب ٹیم کا سکور 76 رنز پر پہنچا تو انگلینڈ کے چار کھلاڑی آؤٹ ہو چکے تھے۔

انگلینڈ نے دو نئے کھلاڑیوں کو ٹیم میں شامل کیا ہے۔ انگلینڈ کی ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے: ایلسٹر کک، کیٹن جیننگز، گیری بیلنس، جو روٹ (کپتان) جانی بیرسٹو (وکٹ کیپر)، بین سٹوکس، معین علی، لیئم ڈواسن، سٹیو براڈ، مارک ووڈ، جیمز اینڈرسن۔

جنوبی افریقہ کی ٹیم: ڈین ایلگر، ہینو کوہن، ہاشم آملہ، جے پی ڈومنی، ٹیمبا بووما، تھونس ڈی برائن، کوئٹن ڈی کاک، ورنن فلینڈر، کشیو مہاراج، کاغیزو ربادہ اور مورنی مورک

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں